معاہدے کے موقع پر 50 ممالک کے نمائندے موجود ہوں گے

امریکا اور طالبان تاریخی امن معاہدے پر آج قطر میں دستخظ کریں گے۔

افغانستان میں 19 برس سے جاری جنگ کے بعد امن کی امید ہوچلی ہے، دوحہ میں امن معاہدے کے موقع وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی سمیت 50 ممالک کے نمائندے موجود ہوں گے، اس معاہدے کے تحت اتحادی افواج افغانستان سے چلی جائیں گی اور طالبان افغان سرزمین دہشت گرد تنظیموں کے زیراستعمال نہ آنے کی ضمانت دیں۔

امریکی وزیرخارجہ مائیک پومپیو معاہدے پر دستخط کے بعد آج شام پریس کانفرنس کریں گے، شاہ محمود قریشی کہتے ہیں معاہدہ افغانستان کے عوام کیلئے روشنی کی کرن ہوگا اور اس سے طویل ترین جنگ ختم ہوگی۔

قطر میں طالبان آفس کے ترجمان سہیل شاہین کہتے ہیں طالبان افغانستان میں امن اور تجارت چاہتے ہیں، پاکستان نے ہمیشہ مسائل کے پرامن حل پر زور دیا اور طالبان پاکستان سمیت تمام ہمسایہ ممالک سے اچھے تعلقات کی خواہش رکھتے ہیں، سہیل شاہین نے واضح کیا کہ طالبان کسی کو افغان سرزمین کسی اور کے خلاف استعمال کرنے کی اجازت نہیں دیں گے، ذرائع کے مطابق معاہدے کے بعد افغان فریقین کے درمیان ڈائیلاگ کا مرحلہ آئے گا، اس میں افغان حکومت اور طالبان کے مذاکرات ہوں گے۔

ٹرینڈنگ

مینو