راشن جمع کرنے کے بھاشن فضول

سندھ حکومت نے عوامی اجتماعات پر پابندی کی خلاف ورزی کرنے والوں کو حراست میں لینے کا حکم دے دیا ہے ، صوبائی وزیراطلاعات ناصر حسین شاہ کہتے ہیں کراچی میں لاک ڈاون جیسی صورتحال نہیں۔ عوام راشن جمع کرنے کی باتیں فضول ہیں۔

وزیراطلاعات سندھ نے سوشل میڈیا خبروں کی تردید کردی ، ناصر حسین شاہ نے بتایا کہ عوام افواہوں پر کان نہ دھریں۔ لاک ڈاون ہورہا ہے نہ راشن جمع کرنے کی ضرورت ہے، حکومت احتياطی اقدامات اٹھا رہی ہے اور مسائل حل کرنے کی صلاحیت رکھتی ہے۔  جھوٹی خبریں پھیلانے والوں کے خلاف مقدمہ درج کیا جائے گا۔

محکمہ داخلہ سندھ نے عوامی اجتماعات پر پابندی کی خلاف ورزی کرنے والے کو 10 دن حراست میں رکھنے کا فیصلہ کیا ہے اور ڈپٹی کمشنرز کو اختیارات دے دیئے گئے ہیں، دوسری بار خلاف ورزی پر حراست کی مدت 90 روز تک بڑھائی جاسکتی ہے۔

یاد رہے کہ سندھ حکومت نے کورونا کی روک تھام کیلئے 3 ہفتے کیلئے ایمرجنسی نافذ کی ہے، صوبے میں مزارات ، مدارس ، درس گاہیں شادی ہالز اور سنیما گھر بند ہیں، کھیلوں کی سرگرمیوں سمیت تمام عوامی اجتماعات پر پابندی ہے۔ کراچی میں قرنطینہ سے فرار مشتبہ مریض کو گھوٹکی سے گرفتار کیا گیا ہے، یہ شخص رپورٹ آنے سے پہلے رفوچکر ہوگیا تھا، اب اسے گھوٹکی ہی کے قرنطینہ میں رکھا گیا ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو