حکومت سچ روکنا چاہتی ہے، مریم اور شہبازشریف کا ردعمل

نیب نے غیر قانونی اراضی کیس میں جنگ اور جیو گروپ کے مالک میر شکیل الرحمان کو گرفتارکر لیا ہے۔

نیب ذرائع کے مطابق میر شکیل الرحمان نے 54 کینال زمین کی خریداری سے متعلق سوالنامہ جمع کرایا تھا البتہ نیب حکام اس سے مطمئن نہیں تھے۔  میر شکیل پر 1986 میں اس وقت کے وزیراعلی نوازشریف سے سیاسی بنیادوں پر زمین لینے کا الزام ہے ، میر شکیل الرحمان نے جو دستاویزات فراہم کیں وہ سرکاری ریکارڈ سے مطابقت نہیں رکھتی، سوالات پوچھنے پر نیب حکام اور میر شکیل الرحمان کی تلخ کلامی ہوئی۔ میر شکیل نیب کو 16 میں سے صرف 4 سوالات کا جواب دے سکے۔

نیب نے 5 مارچ کو بھی میر شکیل الرحمان سے 2 گھنٹے تفتیش کی تھی۔

مسلم لیگ نون کے صدر اور اپوزیشن لیڈر شہباز شریف نے میر شکیل الرحمن کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ میڈیا ریاست کا چوتھا ستون ہے ، فاشسٹ حکمران اسے گرانا چاہتے ہیں ، میڈیا کو 18 ماہ سے دبایا جا رہا ہے اور اس حکومتی اقدام سے انتقام کی بو آرہی ہے۔ شہباز شریف کا کہنا تھا کہ ہر زوال پزیر حکومت کا آخری حملہ میڈیا اور سیاسی مخالفین پر ہوتا ہے۔

اسلام آباد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز نے کہا کہ میڈیا کو زنجیروں میں جکڑا جارہا ہے، میر شکیل الرحمان کی گرفتاری قابل مذمت اور افسوس ناک ہے، اس سے ثابت ہوتا ہے کہ حکومت سچ کا بیان روکنا چاہتی ہے۔ سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ یہ حکومت کا آخری وار ہوگا، میرشکیل الرحمان کی 34 سال پرانے مقدمے میں گرفتاری افسوسناک ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو