کرشن لال بھیل کا انتقال،ویڈیو

معروف فوک سنگر کرشن لال بھیل انتقال کرگئے۔

55 برس کے کرشن لال بھیل سرائیکی اور مارواڑی کے نامور گلوکار تھے ، انھیں گردوں کا عارضہ تھا اور ان کی طبیعت 3 ماہ سے زیادہ خراب ہوگئی تھی۔

صدارتی ایوارڈ یافتہ چولستانی فنکار کو 18 زبانوں پر عبور تھا اور ان کے کئی گانے دنیا بھر میں مقبول ہیں ، اللہ اللہ کیا مزا مرشد کے میخانے میں ہے ایسا ہی ایک کلام تھا آئیں وہ سنتے ہیں۔

اساں یار مناونڑا اے اگرچہ کئی دیگر گلوکاروں نے بھی پڑھا لیکن ان کی زبان سے ادا کئے گئے الفاظ کا چرچہ پوری دنیا میں ہوا۔

میوزک فیسٹولز میں ان کی آمد کا اعلان ہوتا تو لوگوں کی بڑی تعداد سننے پہنچ جاتی۔

پاکستان کا نام روشن کرنے والے اس عظیم گلوکار نے آخری دن غربت میں گزارے اور کسی حکومتی شخصیت نے ان کی مدد نہیں کی۔

ٹرینڈنگ

مینو