غزہ میں جنگ ، اہم اسرائیلی تنصیبات تباہ، ویڈیوز

ویب ڈیسک

مسجد الاقصی میں تشدد اور فلسطین میں فضائی حملوں کے بعد اسرائیل اور حماس میں جنگ چھڑ گئی، اسرائیلی حملوں میں شہید فلسطینیوں کی تعداد اٹھائیس ہوچکی ہے جبکہ حماس نے راکٹ حملوں میں اسرائیل کی کئی اہم تنصیبات کو تباہ کردیا ہے اور مزید ایک شخص ہلاک ہوا ہے۔

غزہ میں معصوم شہریوں کی شہادت کے بعد حماس نے تل ابیب پر راکٹ باری تیز کردی، حماس نے ڈیڑھ سو راکٹ فائر کرنے کی تصدیق کی ہے جبکہ اسرائیل کا دعویٰ ہے کہ ابتک تین سو راکٹ فائر کیے گئے ہیں۔ اسرائیل پر حملے سے تیل کی تنصیبات اور بجلی گھر تباہ ہوگئے۔

حماس نے راکٹ حملوں سے تل ابیب کو بھی نشانہ بنایا ہے ، اسرائیل نے بھی حملوں کی تصدیق کی ہے اور اسرائیلیوں کی ہلاکتیں تین ہوچکی ہیں، سوشل میڈیا پر جاری ویڈیو سے بھی نقصان کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے۔

غزہ پر اسرائیل کے فضائی حملوں میں بھی تیزی آگئی ہے اور صہیونی فورسز کی بمباری سے تیرہ منزلہ عمارت ملبے کے ڈھیر میں تبدیل ہوگئی ہے۔

بمباری سے شہید فلسطینیوں میں دس بچے اور حماس کے پندرہ کمانڈرز بھی شامل ہیں جبکہ تین سو سے زائد افراد زخمی ہیں۔ وسطی غزہ میں حملے سے حماس کا اسکول تباہ کیا گیا جبکہ مشرقی غزہ میں پلاسٹک فیکٹری کو بھی نشانہ بنایا گیا۔ غزہ کی پٹی اور خان یونس میں ان گنت گھر ملبے کا ڈھیر بن گئے۔

یہ جھڑپیں اس وقت شروع ہوئی تھیں جب  مقبوضہ بیت المقدس کے علاقے شیخ جراح  سے فلسطینی مسلمانوں کو گھروں سے بے دخل کرکے یہودیوں کو آباد کرنے کا سلسلہ شروع ہوا ، اسی دوران اسرائیلی فورسز نے جمعۃ الوداع کو مسجد الاقصیٰ میں نمازیوں پر چڑھائی کی اور کئی نمازی زخمی کردیئے، اس بربریت کے بعد حماس نے بدلہ لینے کا اعلان کیا تھا۔

ٹرینڈنگ

مینو