امریکا:19 ہزاراموات،5 لاکھ کیسز

امریکا میں کورونا وائرس نے مزید 2 ہزار افراد کی جان لے لی ، ہلاک افراد کی تعداد 19 ہزار اور کیسز لگ بھگ 5 لاکھ ہوگئے ، نیویارک میں مزید 777 افراد نے دم توڑا ہے اور اموات 7 ہزار 8 سو 44 ہوگئی ہیں، اس کے باجود ریاست سے پہلی اچھی خبر آگئی ہے۔

نیویارک میں کورونا سے متاثرہ افراد ایک لاکھ 70 ہزار ہوچکے ہیں ، 9 ہزار سے زائد نئے کیس رپورٹ ہوئے ہیں اور پونے 9 ہزار افراد کی حالت تشویشناک ہے۔ نیوجرسی ، مشی گن اور کیلی فورنیا باالترتیب دوسرے ، تیسرے اور چوتھے نمبر پر ہیں۔

نیویارک میں کورونا وبا پھیلنے کے بعد سے پہلی بار آئی سی یو میں نئے داخل ہونے والے افراد کی تعداد کم ہوگئی ہے، گورنر اینڈریو کومو کا خیال ہے نیویارک بدترین دور دیکھ چکا۔ اب ان کی توجہ کا مرکز یہ ہے کہ اینٹی باڈی ٹیسٹ کو عوام کیلئے بڑے پیمانے پر ممکن بنایا جائے۔

گورنر اینڈریو کومو نے بتایا کہ ریاست میں اس وقت روزانہ سرکاری سطح پر صرف 300 افراد کا ٹیسٹ کیا جاسکتا ہے جو اگلے ہفتے ایک ہزار اور 15 روز بعد 2 ہزار تک ممکن ہوجائے گا، جلد ہی روزانہ 7 ہزار ٹیسٹ کئے جانے لگیں گے۔

طبی ماہرین کہتے ہیں آئی سی میں مریضوں کے داخلے کی شرح میں کمی کا مطلب وبا پر قابو پانا نہیں ہے اور صورتحال واضح ہونے میں مزید چند روز لگیں گے۔

وبائی امراض کے ماہر ڈاکٹر انتھونی فاوچی کہتے ہیں کہ شہر کب کھیلیں گے یہ فیصلہ حکومت نہیں وائرس کرے گا۔

ٹرینڈنگ

مینو