امریکا: 45 ہزار اموات، 8 لاکھ کیسز

دنیا بھر میں کورونا وائرس سے ہلاک افراد کی تعداد ایک لاکھ 77 ہزار اور کیسز لگ بھگ ساڑھے 25 لاکھ ہوچکے ہیں، امریکا میں مزید 2 ہزار 250 ، اسپین 430 ، اٹلی 534، فرانس 531 ، جرمنی 162 ، برطانیہ 828 ، ایران 88 ، بیلجئم 170، کینیڈا 141 ، سعودی عرب 6 اور عرب امارات میں 3 مریضوں کا انتقال ہوا ہے۔

نیویارک میں کورونا سے اموات کا رونا ابھی ختم نہیں ہوا ، اگرچہ اسپتالوں میں داخل کرائے گئے مریضوں کی تعداد 25 مارچ کے بعد سے کم ترین سطح پر آئی ہے لیکن اب بھی 764 اموات ہوئی ہیں ، ریاست میں ابتک 19 ہزار 693 افراد جان کی بازی ہارے ہیں اور تقریبا 2 لاکھ 57 ہزار کیسز رپورٹ ہوئے ہیں، صورتحال قدرے بہتر ہوئی ہے تو اب گورنر اینڈریو کومو کا کہنا ہے کہ ریاست کے کچھ علاقے پہلے کھول دیئے جائیں گے۔

اوہائیو میں ساڑھے 5 سو سے زائد افراد ہلاک ہوچکے ہیں ، ان میں 60 سالہ جان ڈبلیو مک ڈینئل بھی شامل ہے جس نے لاک ڈاؤن کو سیاسی چال قرار دیا تھا۔ نیوجرسی میں پونے 5 ہزار ، مشی گن میں 27 سو اور کیلی فورنیا میں 12 سے زائد افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں ، ملک بھر میں اموات 45 ہزار اور متاثرین کی تعداد 8 لاکھ سے زائد ہے۔

کینیڈا میں ہلاکتیں ایک ہزار 8 سو 31 ہوچکی ہیں اور تقریبا 14 سو نئے مریض رپورٹ ہونے کے بعد کیسز بڑھ کر 38 ہزار 2 سو ہوگئے ہیں۔

برطانیہ میں مزید 828 مریضوں کی ہلاکت کے بعد اموات 17 ہزار 337 ہوچکی ہیں، ایک لاکھ 29 ہزار کیسز رپورٹ ہوئے ہیں اور ساڑھے 15 سو سے زائد مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔ وزیر صحت میٹ ہینکاک نے اعلان کیا ہے کہ اکسفورڈ یونیورسٹی کی ٹیم جمعرات سے انسانوں پر کورونا وائرس کی ویکسین کا ٹرائل کرے گی، اس سلسلے میں ٹیم کو 2 کروڑ پاونڈ دیئے جائیں گے۔

وبا اسپین میں 21 ہزار 282 ، اٹلی میں 24 ہزار 648 اور فرانس میں 20 ہزار 796 افراد کی جان لے چکی ہے، ایران میں ابتک 5 ہزار 297 ، سعودی عرب میں 109 ، متحدہ عرب امارات میں 46 اور عراق میں 83 افراد جاں بحق ہوئے ہیں۔

ٹرینڈنگ

مینو