امریکا:2150 اموات، مسلح افراد کا ایوان پر دھاوا

دنیا بھر میں کورونا سے اموات 2 لاکھ 34 ہزار ہوگئیں اور وبا 33 لاکھ افراد کو بیمار کرچکی ہے۔ امریکا میں مزید 2150 ، اسپین 268 ، اٹلی 285 ، برطانیہ 674 ، فرانس 289 ، جرمنی 105 ، ایران 71، کینیڈا 184 ، سعودی عرب 5 اور متحدہ عرب امارات میں 7 اموات ہوئی ہیں۔

امریکا میں اموات لگ بھگ 64 ہزار اور کیسز 3 لاکھ 11 ہزار ہوگئے ہیں ، نیویارک میں 23 ہزار 780 اور نیوجرسی میں 7 ہزار 228 ہلاکتیں ہوچکی ہیں، متاثرہ ریاستوں میں مشی گن کا تیسرا نمبر ہے، یہاں 3 ہزار 562 افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔

مشی گن میں لاک ڈاؤن کے بندوق بردار مخالفین نے سینیٹ گیلری پر دھاوا بول دیا، ایوان میں ارکان بلٹ پروف جیکٹس پہنے ہوئے تھے اور ایمرجنسی میں توسیع کیلئے گورنر کی درخواست مسترد کردی گئی، ریلی کا اہتمام مشی گن یونائیٹڈ فار لیبرٹی نے کیا تھا ، احتجاج میں سیکڑوں افراد شریک ہوئے جنھوں نے صدر ٹرمپ کی حمایت میں بینرز اٹھا رکھے تھے۔

کینیڈا میں 3 ہزار 180 افراد دم توڑ چکے ہیں ، 14 سو نئے کیسز رپورٹ ہونے کے بعد متاثرین کی تعداد 53 ہزار سے زائد ہے۔

برطانیہ میں آج بھی شہریوں نے تالیاں بجا کر ڈاکٹروں کو خراجِ تحسین پیش کیا۔ وزیراعظم بورس جانسن نے کہا ہے کہ کورونا وبا کا عروج ختم ہوگیا اور اب زور ٹوٹ رہا ہے، انھوں نے اگلے ہفتے معیشت کا پہیہ چلانے کیلئے پلان بتانے کا بھی وعدہ کیا۔ ملک میں اموات 26 ہزار 771 ہوچکی ہیں اور کیسز ایک لاکھ 71 ہزار سے زائد ہیں۔ فرانس میں 24 ہزار 376 افراد زندگی کی بازی ہارے ہیں اور بیماروں کی تعداد ایک لاکھ 67 ہزار سے بھی زیادہ ہے۔ جرمنی میں پابندیاں نرم کرتے ہوئے عجائب گھر ، گیلریز ، چڑیا گھر اور گراونڈز کھول دیئے گئے ہیں جبکہ عبادت گاہوں میں مذہبی رسومات کی اجازت بھی دیدی گئی ہے۔

سعودی عرب میں وبا سے 162 افراد جان گنوا چکے ہیں جبکہ کیسز 22 ہزار 750 سے زیادہ ہیں، کورونا سے متحدہ عرب امارات میں 105 افراد کا انتقال ہوچکا ہے اور ساڑھے 5 سو نئے کیسز کے بعد اب متاثرین کی تعداد 12 ہزار 481 ہوگئی ہے۔ وائرس سے ایران میں 6 ہزار 28 افراد لقمہ اجل بنے ہیں اور 94 ہزار 650 متاثر ہیں۔

ٹرینڈنگ

مینو