امریکی اڈوں پر حملے، 80 فوجی ہلاک، ایران

ایران نے جنرل قاسم سلیمانی پر حملے کا جواب دیدیا ، عراق میں امریکا کے 2فوجی اڈوں پر زمین سے زمین پرمار کرنے والے میزائلوں کے ذریعے کئے گئے حملوں میں 80 فوجی ہلاک کرنے کا دعوی کردیا۔ امریکی فوج نے حملے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ تمام فوج محفوظ ہیں۔

ایرانی میڈیا کے مطابق حملے سے امریکی ہیلی کاپٹرز اور فوجی سامان کو شدید نقصان پہنچا ، پاسداران انقلاب نے اس حملے کو شاہد سلیمانی آپریشن کا نام دیا اور وارننگ دی کہ اب جو زمین ایران کے خلاف استعمال ہوئی اسے ہدف بنایا جائے گا۔

ایران نے امریکا کے علاقائی اتحادیوں کو بھی ایران پر جارحیت میں حصہ دار نہ بننے کی ورننگ دی ہے اور حملے کی صورت میں اسرائیل کے شہر حیفہ کو نشانہ بنانے کا اعلان کیا ہے۔

امریکی محکمہ دفاع پینٹاگون نے تصدیق کرتے ہوئے حملے کا وقت صبح ساڑھے 5 بجے بتایا ہے ، پینٹاگون  کے مطابق ایک درجن سے زائد میزائلوں سے عین الاسد اور اربیل میں فوجی اڈوں کو نشانہ بنایا گیا، ریڈار سے میزائلوں کا بروقت علم ہونے کے باعث امریکی فوجی محفوظ مقام پر منتقل ہوگئے تھے، امریکا نے عراق اور خیلجی ممالک کیلئے اپنی سول پروازوں پر پابندی لگا دی ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو