کورونا 4 ہزار سے زائد زندگیاں نگل گیا

دنیا بھر میں کورونا وائرس سے ہلاک افراد کی تعداد 4 ہزار سے بھی زیادہ ہوگئی ، پورے اٹلی کا لاک ڈاون کردیا گیا ہے، چین میں مزید 17 ، جنوبی کوریا ، جاپان اور امریکا میں 1 ،1 مریض ہلاک ہوگیا ہے۔   

اطالوی حکام مسلسل کوششوں کے باوجود کورونا کی روک تھام میں ناکام ہوگئے، 463 اموات کے بعد پورا ملک بند کرنا پڑگیا۔ یہاں نہ صرف ہلاکتیں بڑھ رہی ہیں بلکہ مریضوں کی تعداد بھی 9 ہزار سے زائد ہوچکی ہے۔

اسپین میں کورونا سے 30 افراد ہلاک ہوچکے ہیں اور مریضوں کی تعداد 12 سو سے زیادہ ہے ، حکومت نے  وائرس کو پھیلنے سے روکنے کیلئے میڈریڈ سمیت 3 شہریوں میں تعلیمی ادارے 15 دن کیلئے بند کرنے کا اعلان کیا ہے۔ فرانس میں بھی 30 ہلاکتیں ہوئی ہیں اور 14 سو سے زائد مریض زیرعلاج ہیں۔ جرمنی میں 2 ہلاکتیں ہوئی ہیں اور زیرعلاج افراد کی تعداد 12 سو سے زائد ہوچکی ہے۔

برطانیہ میں 5 اموات کے بعد ہنگامی اقدامات کئے جارہے ہیں اور ملک میں 321 مریض بھی زیرعلاج ہیں۔

کینیڈا میں کورونا سے پہلی موت ہوئی ہے ، ہلاک شخص کی عمر تقریبا 80 سال بتائی گئی ہے اور ملک میں مریضوں کی تعداد 77 ہوچکی ہے۔

کورونا وائرس امریکا میں بھی وبائی شکل اختیار کرگیا ہے ، ابتک یہاں 27 اموات ہوچکی ہیں اور 7 سو سے زائد افراد زیرعلاج ہیں۔ ریپبلکن رہنما مٹ گیٹز کورونا مریض سے رابطے میں آنے کے بعد ازخود قرنطینہ میں چلے گئے ہیں۔ وہ اس دوران صدر ٹرمپ سے بھی رابطے میں رہے تھے۔

کورونا کے خوف اور تیل کی عالمی قیمتوں میں کمی کے باعث امریکی اسٹاک مارکیٹ کا دھڑن تختہ ہوگیا ہے ، سرمایہ کاروں کے 2 کھرب ڈالر ڈوب گئے تو کئی نے سر پکڑا اور کئی نے دل دھام لئے ، یہاں انڈیکس 2014 پوائنٹس پر پہنچا اور یہ 2008 کے بعد سب سے بدترین صورتحال ہے۔

عراق میں کورونا سے ہلاکت کے بعد لوگ خوفزدہ ہیں اور ملک میں 70 سے زائد مریض زیرعلاج ہیں۔

ٹرینڈنگ

مینو