برنی سینڈرز نے روسی کوشش کی مذمت کردی

امریکی انٹیلی جنس حکام نے دعوی کیا ہے کہ روس سوشلسٹ نظریات کے حامل برنی سینڈرز کو ڈیموکریٹ پارٹی کا صدارتی امیدوار بنانا چاہتا ہے۔ برنی سینڈرز نے روسی کوشش کی مذمت کردی ہے۔

امریکی میڈیا کے مطابق انٹیلی جنس حکام نے برنی سینڈرز سے ایک ماہ پہلے ملاقات کی تھی ، اس میں ڈیموکریٹ پارٹی کے صدارتی امیدوار بننے کے خواہش مند کو روسی سازشوں سے آگاہ کردیا گیا تھا۔

برنی سینڈرز اس وقت صدارتی امیدوار بننے کی خواہش مند شخصیات میں سب سے زیادہ مقبول ہیں ، آئیواکاکس اور نیوہیم شائر پرائمری کے بعد ان کی مقبولیت کا گراف مزید بڑھا ہے۔ وہ اینٹی اسٹیبلشمنٹ ہونے کی وجہ سے عوام کے دلوں میں گھر کرچکے ہیں۔

برنی سینڈرز روسی صدر پیوٹن کے شدید مخالف ہیں اور انہوں نے صدر پیوٹن کو ٹھگ قرار دیا ہے۔

کیلی فورنیا میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے برنی سینڈرز نے روس کو خبردار کیا کہ وہ 2020 کے الیکشن میں مداخلت سے باز رہے ، امریکی رہنما کا کہنا تھا کہ انٹیلی جنس حکام انھیں بتارہے ہیں کہ روس ان کی انتخابی مہم میں مداخلت کر رہا ہے، انھوں نے روسی صدر کو مخاطلب کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر وہ صدر منتخب ہوگئے تو امریکی سیاست میں روسی مداخلت بند کردیں گے۔

ٹرینڈنگ

مینو