بڑی دریافت، کورونا انفیکشن روکنا ممکن

کیلی فورنیا کی بائیوٹیک کمپنی نے ایک ایسی اینٹی باڈی دریافت کی ہے جو کورونا وائرس کے انفیکشن کو سو فیصد روک سکتی ہے۔

کیلی فورنیا کی سورینٹو تھیروپیوٹکس کمپنی کے سائنسدان اسے ویکسین کی تیاری تک علاج قرار دے رہے ہیں، سورینٹو کا کہنا ہے کہ 2 لاکھ ڈوزز ایک ماہ میں تیار کی جاسکتی ہیں۔ سان ڈیاگو میں قائم اس کمپنی کا دعویٰ ہے کہ لیبارٹری تجربات سے ثابت ہوگیا ہے کہ اس کی ایس ٹی آئی 1499 اینٹی باڈی کورونا وائرس کو انسانی سیل میں داخل ہونے سے سو فیصد روکتی ہے۔

کمپنی کے سی ای او ڈاکٹر ہینری کہتے ہیں ویکسین کی تیاری تک یہ بہترین ہے، اگر جسم میں نیوٹرلائزنگ اینٹی باڈی ہو تو سماجی فاصلے کی ضرورت نہیں رہے گی اور آپ معاشرے کو کسی خوف کے بغیر آزادی دے سکتے ہیں۔

کمپنی نے یو ایس فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن سے اسے ہنگامی بنیادوں پر منظور کرنے کی درخواست کردی ہے تاکہ اس کا انسانوں پر تجربہ کیا جاسکے۔ یہ اینٹی باڈی چونکہ انسانوں پر آزمائی نہیں گئی اسی لئے فی الحال یہ نہیں کہا جاسکتا کہ انسانی جسم میں جا کر کیسا عمل کرے گی اور اس کے سائیڈ افیکٹ کیا ہوں گے۔

ٹرینڈنگ

مینو