رینڈ پال کو کورونا ، سینیٹر کس کس سے ملے ؟

کورونا وائرس امریکی ایوان نمائندگان کے ارکان کو بیمار کرنے کے بعد اب سینیٹر تک پہنچ گیا۔

57 برس کے سینیٹر رینڈ پال کا تعلق کینٹاکی سے ہے۔ وہ پہلے سینیٹر ہیں جو کورونا وائرس کا شکار ہوئے ہیں۔ 2 روز پہلے ہی انہوں نے کئی ساتھیوں کے ساتھ لنچ میں شرکت کی تھی ، اب ان کے ساتھیوں نے بھی کورونا ٹیسٹ کرانے پر غور شروع کردیا ہے۔ سینیٹر رینڈ پال کا کہنا ہے کہ ان میں کورونا کی علامات نہیں ہیں اور وہ خود کو بہتر محسوس کررہے ہیں تاہم قرنطینہ اختیار  کرلیا ہے۔ سینیٹر رینڈ پال کہتے ہیں انہیں علم نہیں کہ وہ کسی متاثرہ شخص سے ملے ہوں۔

سینیٹر رینڈ پال سے پہلے ایوان کے رکن ماریوڈائز اور بن مک ایڈمز بھی کورونا بیماری میں مبتلا ہوچکے ہیں۔

امریکا میں بڑھتے ہوئے کورونا کیسز سے پوری قوم تشویش میں مبتلا ہے ، اب اوہائیو اور لیوزینا کو بھی بند کرنا پڑا ہے جس سے مختلف ریاستوں میں لاک ڈاون پر مجبور امریکیوں کی تعداد پونے 2 کروڑ کےقریب پہنچ گئی ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو