نیب کے پاس گرفتاری کا اختیار نہیں، اعتزاز احسن

لاہور کی احتساب عدالت نے جنگ اور جیو گروپ کے مالک میر شکیل الرحمان کا 12 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرلیا ہے۔

احتساب عدالت میں میرشکیل الرحمان کی جانب سے بیرسٹر اعتزاز احسن پیش ہوئے ، اعتزاز احسن نے کہا کہ نیب نے شکیل الرحمان کو کوئی نوٹس نہیں دیا تھا، نیب کے پاس ان کی گرفتاری کا اختیار نہیں، ہمیں ابتک وارنٹ گرفتاری نہیں دیا گیا۔ اعتزاز احسن نے کہا کہ ان کے موکل نے ایل ڈی اے سے نہیں تیسرے شخص سے قانون کے مطابق زمین خریدی تھی ، بزنس مین کو طلب کرنے سے پہلے قانونی طریقہ کار اختیار نہیں کیا گیا، یہ کارروائی نیب کی بدنیتی ظاہر کرتی ہے۔ 34 سال پرانے معاملے پر نیب ابتک خاموش رہا اور اچانک کارروائی شروع کردی۔

نیب پراسیکیوٹر حافظ اسد اللہ نے دلائل میں کہا کہ دسمبر 2019 میں تحقیقات شروع کی گئی ، میر شکیل نے نواز شریف سے 54 کنال اراضی حاصل کی جب وہ وزیراعلیٰ تھے، غیر قانونی طریقے سے ایل ڈی اے کے پلاٹ نام کرائے گئے۔ عدالت نے دلائل سننے کے بعد میر شکیل الرحمن کا 12 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرتے ہوئے انھیں 25 مارچ تک نیب کی تحویل میں دے دیا۔

ٹرینڈنگ

مینو