عرفان خان کا سرینڈر ، بالی وڈ اسٹار کا انتقال

نامور اداکار عرفان خان نے موت کے آگے سرینڈر کردیا ، 53 برس کے بالی وڈ اسٹار کے انتقال پر فلم انڈسٹری اور ان کے مداح سوگوار ہیں۔

53 سالہ عرفان خان کو آنت میں انفیکشن کے باعث ممبئی کے اسپتال میں داخل کرایا گیا تھا،  بالی وڈ ہدایت کار سرشوجیت سرکار نے ٹوئٹ کرکے اداکار کی اہلیہ سے اظہار تعزیت کیا ہے۔

مارچ 2018 میں کینسر کی تشخیص کے بعد عرفان خان برطانیہ چلے گئے تھے۔

عرفان خان چند ماہ پہلے لندن سے واپس آئے تھے ، ان کی والدہ سعیدہ بیگم کا کچھ روز پہلے جے پور میں انتقال ہوا تھا اور عرفان خان کی طبیعت اس کے بعد سے زیادہ خراب ہوگئی تھی۔

وہ کمزوری کے باعث اپنے گھر میں گر گئے تھے اور انھیں سانس لینے میں تکلیف کے بعد اسپتال منتقل کیا گیا تھا۔

لاک ڈاؤن سے پہلے ان کی فلم انگریزی میڈیم ریلیز ہوئی تھی ، عرفان خان نے ہندی میڈیم ، لنچ باکس اور پیکو سمیت کئی فلموں میں شاندار اداکاری کا مظاہرہ کیا۔

انھیں پان سنگھ تومر میں بہترین ادکاری پر نیشنل ایوارڈ دیا گیا تھا۔

ان کی دیگر مشہور فلموں میں مقبول ، جراسک ورلڈ ، دی امیزنگ اسپائیڈر اور لائف آف پائی شامل ہیں۔

ان کی فلم سلام ممبئی 1988 میں مشہور ہوئی تھی۔ ادکار کے فینز حاصل ، دی لنچ باکس ، جذبہ ، سات خون معاف ، ایسڈ فیکٹری ، دی نیم سیک ، روگ اور آن مین ایٹ ورک میں ان کی اداکاری کبھی نہیں بھول سکتے۔ عرفان خان نے ایک بار کہا تھا کہ انھیں یقین ہے کہ انھوں نے ہتھیار ڈال دیئے ہیں اور آج ان کی موت نے فلم انڈسٹری سوگوار کردیا ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو