لاک ڈاؤن مزید نرم کرنے کی سفارش

وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت قومی رابطہ کمیٹی کا اجلاس آج ہورہا ہے، قومی قیادت نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے اجلاس میں لاک ڈاؤن مزید نرم کرنے کیلئے تیار کی گئی سفارشات پر فیصلہ کرے گی۔ 

وفاقی وزیر منصوبہ بندی و ترقی اسد عمر کی زیر صدارت نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر کے اجلاس میں لاک ڈاؤن سے متعلق امور پر غور کیا گیا، اس دوران ملک بھر میں مقامی سطح پر ٹرانسپورٹ کھولنے کی سفارش کی گئی۔

اجلاس میں تجویز دی گئی کہ شہروں کے اندر ٹرانسپورٹ سروس کے آغاز کا فیصلہ اڈہ مالکان پر چھوڑ دیا جائے، اڈہ مالکان اور ٹرانسپورٹرز کو کورونا سے بچاو کیلئے ایس او پی پر عملدرآمد کا پابند بنایا جائے۔

ذرائع کے مطابق اجلاس کے شرکا کی اکثریت نے ٹرین سروس بحال کرنے کی مخالفت کی۔ رہنماوں نے تجاویز تیار کرلی ہیں اور اب حتمی فیصلہ وزیراعظم کی زیرصدارت قومی رابطہ کمیٹی کی بیٹھک میں ہوگا۔

وزیراعظم کی زیرصدارت قومی رابطہ کمیٹی کے اجلاس میں گلگت بلتستان اور چاروں صوبوں کے وزرائے اعلی بھی شرکت کریں گے۔ ذرائع نے زبرنیوز کو بتایا کہ 9 مئی کے بعد ایس او پیز کے تحت بعض کاروبار کھولنے کی اجازت دیئے جانے کا امکان ہے، عید کے پیش نظر کپڑوں ، جوتوں اور دیگر سامان کی دکانیں صبح 9 بجے سے شام 5 بجے اور رات 8 بجے سے 10 بجے تک کھولنے کی اجازت دی جاسکتی ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو