دمے کے مریض گھروں میں رہیں، سندھ حکومت

سندھ حکومت نے کراچی کے علاقے کیماڑی میں لوگوں کے متاثر ہونے کی وجہ سویابین ڈسٹ قرار دیتے ہوئے ہیلتھ ایڈوائزری جاری کردی ہے۔

محکمہ صحت سندھ نے ایڈوائزری میں کہا ہے کہ سویا بین ڈسٹ سے سانس لینے میں مشکل ہوتی ہے ، دمے کے مریض ماسک لگائیں، پانی کا زیادہ سے زیادہ استعمال کریں اور بلا ضرورت گھروں سے نہ نکلیں، سویا الرجی کی وجہ سے منہ میں خراش، جلد کا ایکزیما ، ہونٹ، چہرہ، زبان اور گلے میں سوزش ہوتی ہے، شدید اثر ہو تو انسان بے ہوش بھی ہوسکتا ہے۔

محکمہ صحت نے ڈاکٹر ظفر مہدی کو سویابین ڈسٹ الرجی سے متعلق فوکل پرسن مقرر کیا ہے اور ایڈوائزری تمام اسپتالوں کی انتظامیہ کو بھیج دی گئی ہے۔

ایڈوائزری میں طبی عملے کی تربیت، ادویات کی موجودگی اور دیگر انتظامات یقینی بنانے کی ہدایت کی گئی ہے۔

اس سے پہلے وزیراعلیٰ سندھ کے مشیر قانون و ماحولیات مرتضیٰ وہاب نے جامعہ کراچی کے ماہرین کی رپورٹ کا حوالہ دے کر بتایا تھا کہ کیماڑی کا واقعہ سویابین ڈسٹ کی وجہ سے پیش آیا ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو