معاہدے کےتمام نکات پر عملدرآمد ناگزیر ہے، طالبان

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور طالبان رہنما ملا برادر کا ٹیلی فونک رابطہ ہوا ہے ، طالبان کے مطابق ملا برادر نے قیام امن کیلئے معاہدے کے تمام نکات پر جلد عملدرآمد کو ناگزیر قرار دیا ہے۔

طالبان ترجمان نے بتایا کہ ڈونلڈ ٹرمپ اور طالبان مذاکرات کار ملا برادر کی گفتگو 35 منٹ جاری رہی،  ملا برادر نے کہا کہ امن معاہدے پر فوری عملدرآمد افغان عوام کا حق ہے، صدر ٹرمپ نے بتایا کہ وہ مائیک پومپیو سے کہیں گے کہ افغان صدر اشرف غنی سے بات کی جائے تاکہ انٹرا افغان مذاکرات میں حائل روکاٹیں ختم ہوسکیں۔

ملا برادر اور ڈونلڈ ٹرمپ کی ٹیلی فونک گفتگو کے موقع پر امریکی نمائندہ خصوصی زلمے خلیل زاد بھی موجود تھے۔

صدر ٹرمپ نے صحافیوں کو بتایا کہ ان کے ملا برادر سے اچھے تعلقات ہیں، گفتگو طویل اور اچھی ہوئی، امریکا اور طالبان اس معاملے کو ختم ہوتا دیکھ رہے ہیں۔

امریکی صدر اور طالبان رہنما کا یہ رابطہ ایسے وقت ہوا ہے جب افغان صدر طالبان قیدیوں کی رہائی سے انکار کرچکے ہیں اور طالبان نے جنگ بندی ختم کرکے افغان فورسز پر حملوں کا اعلان کیا ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو