نیویارک:اموات10 ہزار ،اٹلی سنبھل گیا

دنیا بھر میں کورونا سے ہلاکتیں ایک لاکھ 19 ہزار اور کیسز 19 لاکھ 20 ہزار سے زائد ہوگئے۔ امریکا میں مزید 14 سو اموات ہوئی ہیں ، اٹلی اور اسپین میں لاک ڈاؤن نرم کردیا گیا جبکہ فرانس میں 11 مئی تک توسیع کردی گئی ہے۔

نیویارک میں کورونا سے مزید 671 افراد کی موت کے بعد ہلاکتیں 10 ہزار سے بھی زیادہ ہوگئیں، ریاست میں تقریبا ایک لاکھ 96 ہزار کیسز رپورٹ ہوچکے ہیں اور اب بھی ایک ہزار افراد کی حالت تشویشناک ہے۔

نیویارک میں تو صورتحال خراب ہے ہی لیکن نیوجرسی میں بھی خطرات بڑھتے جارہے ہیں، یہاں تقریبا ڈھائی ہزار اموات ہوچکی ہیں اور کیسز کی تعداد ساڑھے 64 ہزار سے زائد ہے ، میساچوسٹس ، مشن گن ،پنسلوانیا اور کیلی فورنیا میں بھی وبا جڑ پکڑ چکی ہے۔

برطانیہ میں کورونا سے مزید 717 افراد کا انتقال ہوا ہے اور ہلاکتیں 11 ہزار 329 ہوچکی ہیں، البتہ مسلسل تیسرے دن اموات کی تعداد کم ہوئی ہے ، وزیرخارجہ ڈومینک راب نے لاک ڈاؤن جاری رہنے کا اعلان کرتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ وبا ابھی عروج پر نہیں پہنچی۔ فرانس میں پونے 6 سو افراد کی ہلاکت ہوئی ہے اور تقریبا 15 ہزار افراد ابدی نیند سوچکے ہیں۔ حکومت نے  لاک ڈاؤن کی مدت 11 مئی تک بڑھادی ہے، صدر عمانوئیل میکرون کہتے ہیں اگرچہ وبا دم توڑتی نظر آرہی ہے لیکن کچھ بھی یقینی نہیں۔

اٹلی میں 20 ہزار 465 اور اسپین میں 17 ہزار 630 اموات کے بعد وبا پر کنٹرول ہوتا جارہا ہے، یہی وجہ ہے کہ دونوں ممالک میں لاک ڈاؤن نرم کردیا گیا ہے۔ اٹلی میں اسٹیشنری اور گارمنٹس کی کچھ دکانیں کھولنے کی اجازت دی گئی ہے البتہ فیکٹریاں 3 مئی تک بند رہیں گی۔ اسپین میں تعمیراتی اور پیداواری صنعتوں کیلئے لاک ڈاون نرم کیا گیا ہے۔

کینیڈا میں مزید 50 اموات کے بعد ہلاکتیں 767 ہوچکی ہیں، 24 گھنٹے میں ساڑھے 11 سو مریض رپورٹ ہونے کے بعد کیسز 25 ہزار 5 سو 52 ہوچکے ہیں۔ سعودی عرب میں 6 افراد جاں بحق ہوئے ہیں اور تعداد 65 ہوچکی ہے، متحدہ عرب امارات میں مزید 3 افراد نے دم توڑا ہے اور یہاں اموات 25 ہوگئی ہیں، ایران میں 111 افراد لقمہ اجل بنے ہیں اور 4 ہزار 585 شہری دم توڑ چکے ہیں۔

ٹرینڈنگ

مینو