نیویارک: بیمارہر ملک سے زیادہ

کورونا وائرس کے باعث  امریکا میں مزید 15 سو شہریوں نے دم توڑا ہے اور کیسز 5 لاکھ 60 ہزار ہوچکے ہیں۔ کینیڈا میں بھی مزید 60 افراد جان سے گئے ہیں۔

کورونا وبا نے نیویارک میں مزید 758 افراد کی جان لے لی ، ہلاکتیں 9 ہزار 385 اور متاثرین ایک لاکھ 88 ہزار 700 سو ہوچکے ہیں ، امریکا کی یہ ریاست کیسز میں دنیا بھر سے آگے نکل گئی ہے۔ اب کسی بھی ملک میں اتنے متاثرین نہیں جتنے نیویارک میں ہیں ، اگرچہ اسپین اور اٹلی کی آبادی نیویارک سے زیادہ ہے لیکن وہاں بھی بیمار کم ہیں۔

نیوجرسی اموات کے اعتبار سے امریکا میں دوسرے ، میساچوسٹس تیسرے ، مشن گن چوتھے ،پنسلوانیا پانچویں اور کیلی فورنیا چھٹے نمبر پر ہے۔

امریکا میں وبائی امراض کے ماہر اور صدر کے مشیر ڈاکٹر فاوچی نے تسلیم کیا ہے کہ صدر ٹرمپ نے اگر فروری میں لاک ڈاؤن کردیا ہوتا تو بہت سی زندگیاں بچائی جاسکتی تھیں لیکن صدر نے یہ اقدام مارچ کے وسط میں کیا۔ امریکی ٹی وی سے گفتگو میں ڈاکٹر فاوچی نے کہا کہ وہ صرف تجاویز پیش کرسکتے جو بعض اوقات منظور بھی کرلی جاتی ہیں۔

کینیڈا میں ہلاک افراد کی تعداد سوا 7 سو اور کیسز 25 سو کے قریب پہنچ گئے ہیں ۔ وبا نے فرانس میں 14 ہزار 4سو زندگیاں نگل لی ہیں، اسپین میں 17 ہزار 113 اور اٹلی میں 19 ہزار 900 افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔ ایران میں جاں بحق افراد کی تعداد 4 ہزار 475 ہوچکی ہے، سعودی میں 59 ، عرب امارات میں 2 اور عراق میں 4 افراد جاں بحق ہوئے ہیں۔

ٹرینڈنگ

مینو