نیویارک: معاون اور اداکارہ سے زیادتی کا جرم ثابت

خوبصورت لڑکیوں سے زیادتی کرنے والا ہاروی وائن اسٹائن مجرم قرار پاتے ہی اچانک بیمار پڑگیا۔ اسے جس ایمبولینس میں جیل لے جایا جا رہا تھا اسی کا رخ اسپتال کی طرف موڑنا پڑگیا۔

ہاروی وائن اسٹائن نے سینے میں تکلیف کی شکایت کی تھی جس پر جنسی درندے کو جیل کی بجائے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے جہاں وہ بلڈ پریشر میں مبتلا پایا گیا۔

نیویارک کی جیوری نے ہالی ووڈ کے بدنام زمانہ فلم ساز کو مجرم قرار دیا تھا۔ ہاروی پر اپنی خوبرو معاون اور اداکارہ بننے کی خواہش مند لڑکی سے زیادتی کا جرم ثابت ہوگیا تھا۔

دنیا کی ٹاپ ماڈلز اور ہالی ووڈ کی درجنوں نامور اداکارائیں یہ الزام لگا چکی ہیں کہ ہاروی وائن اسٹائن نے انہیں فلموں میں کام دینے کے بدلے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا تھا۔

مجرم قرار دیئے جانے پر ہاروی وائن اسٹائن خود کو بے گناہ کہتا رہا اور چلاتا رہا کہ وہ بے قصور ہے ، اس نے حیرت سے سوال کیا کہ امریکا میں یہ کسیے ہوسکتا ہے کہ ایک بے گناہ شخص کو مجرم قرار دے دیا جائے۔

ہالی ووڈ کی ٹاپ اداکاراوں کے ساتھ چہکتے ہاروی وائن اسٹائن کا سزا سنتے ہی چہرہ پیلا پڑگیا۔ ہاروی وائن اسٹائن کو ہتھکڑی لگا کر عدالت سے لے جایا گیا اب اسے 11 مارچ کو سزا سنائی جائے گی۔

ٹرینڈنگ

مینو