نیویارک کے تھانے میں پہلا افطار ڈنر،ویڈیو

طاہر عباس

امریکن پاکستانی پبلک افیئرز کمیٹی کے چیئرمین ڈاکٹر اعجاز احمد کی جانب سے نیویارک کے مسلم پولیس افسروں کے اعزاز میں افطار ڈنر کا اہتمام کیا گیا۔

یہ تقریب بروکلین کے علاقے رالف ایونیو پر واقع 81 پولیس اسٹیشن میں منعقد کی گئی تھی۔ اپنی نوعیت کے اس پہلے افطار ڈنر میں مختلف مذاہب سے تعلق رکھنے والے اہلکاروں کو بھی مدعو کیا گیا تھا۔

ڈاکٹر اعجاز نے خطاب میں کہا کہ لاک ڈاون کے سبب لوگوں کی بڑی تعداد گھروں میں ہے مگر پولیس کا عملہ 24 گھنٹے لوگوں کی حفاظت کر رہا ہے۔ اپنی جان داو پر لگانے والے ان اہلکاروں ہی کے سبب ریاست کے باسی خود کو محفوظ تصور کر رہے ہیں۔

امریکا: اے پی پیک کی جانب سے پولیس اہلکاروں کیلئے افطار ڈنر

امریکا: اے پی پیک کی جانب سے پولیس اہلکاروں کیلئے افطار ڈنر

Posted by Zabar News on Wednesday, May 20, 2020

ڈاکٹر اعجاز کا کہنا تھا کہ کئی پولیس اہلکاروں نے کورونا کے خلاف جنگ میں جانوں کا نذرانہ پیش کیا جبکہ کئی دیگر کے عزیز وبا کا شکار ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ امریکن پاکستانی کمیونٹی ان سب کے دکھ میں برابر کی شریک ہے۔

ڈاکٹر اعجاز نے کہا کہ آج وہ ایسے افراد کے ساتھ فخر سے روزہ افطار کررہے ہیں جو خود کو معاشرے کا عام فرد کہتے ہیں لیکن حقیقت میں ہر شخص کے ہیرو ہیں۔

نیویارک پولیس کے افسر نے اے پی پیک کی اس کاوش کو اہلکاروں کا حوصلہ بڑھانے کی جانب اہم قدم قرار دیا۔

امریکا: اے پی پیک کی جانب سے پولیس اہلکاروں کیلئے افطار ڈنر

امریکا: اے پی پیک کی جانب سے پولیس اہلکاروں کیلئے افطار ڈنر

Posted by Zabar News on Wednesday, May 20, 2020

امریکا میں کورونا وبا کے باوجود اے پی پیک فلاحی کاموں میں انتہائی متحرک ہے۔ ڈاکٹراعجاز احمد نے امریکا میں کورونا وبا سے ہراول دستے کو بچانے کیلئے 2ٹیلی تھون بھی کی تھیں۔

APPAC Covid 19-Relief Telethon

APPAC Covid 19-Relief Telethon

Posted by APPAC – American Pakistani Public Affairs Committee on Saturday, May 2, 2020

امریکا میں کورونا سے تقریبا 94 ہزار افراد ہلاک ہوچکے ہیں، سب سے زیادہ ہلاکتیں نیویارک میں ہوئی ہیں جہاں یہ تعداد بڑھ کر 29 ہزار تک پہنچ گئی ہے۔ امریکا میں ساڑھے 15 لاکھ افراد کورونا کے مریض ہیں جبکہ اس ریاست میں کورونا کیسز کی تعداد پونے 4 لاکھ ہے۔

امریکا میں  کورونا سے ہراول دستے کے افراد بڑی تعداد میں موت کی آغوش میں گئے۔ صرف نیویارک میں 31 پولیس اہلکار انتقال کر چکے ہیں۔

شہر میں 3 پولیس اہلکاروں کی یکے بعد دیگرے موت بھی ہوئی تھی۔ یہ وہی دن تھا جب کیپٹن محمد رحمان بھی جاں بحق ہوئے تھے جن کے ایثال ثواب کیلئے فاتحہ خوانی کی گئی۔

نیویارک پولیس ڈیپارٹمنٹ کا ایک اہلکار جو نائن الیون واقعہ کے سبب کینسر کا شکار ہوگیا تھا وہ بھی کورونا سے چل بسا۔ لانگ آئی لینڈ اور ٹرائے کے پولیس سارجنٹ بھی کورونا میں مبتلا ہوکر انتقال کرچکے ہیں۔

ٹریفک سیکشن کے کمانڈر محمد چوہدری بھی ہر اول دستے کا حصہ تھے ، یونکرز اور آکزیلری فورس کے 2 افسروں کو بھی وبا نے موت کی نیند سلادیا۔ نیویارک میں محکمہ پولیس سے تعلق رکھنے والے اہلکار کی پہلی موت ایک کسٹوڈین کی ہوئی تھی۔ جب ڈپٹی کمشنر کو بھی اس وبا سے اسپتال میں داخل ہونا پڑا تھا۔

ایسے ہی اہلکاروں کو خراج عقیدت اور ان کے ساتھیوں کو خراج تحسین پیش کرنے کیلئے امریکن پبلک افیئرز کمیٹی کی جانب سے مسلم پولیس اہلکاروں کیلئے افطاری جبکہ دیگر مذاہب سے تعلق رکھنے والے اہلکاروں کیلئے خصوصی ڈنر کا اہتمام کیا گیا تھا۔

افطار ڈنر کے بعد ہراول دستے کو پرسنل پروٹیکٹیو ایکوپمنٹ اور ماسک سمیت دیگر چیزیں بھی دی گئیں۔

ٹرینڈنگ

مینو