وسیم پر پابندی لگنی چاہئے تھی، سرفراز

کرکٹ میں میچ فکسنگ کی گونج بڑھتی جارہی ہے اور الزامات کی جنگ میں سابق فاسٹ بالر سرفراز نواز بھی کود گئے ہیں۔

سابق ٹیسٹ کرکٹر نے الزامات کی نئی پٹاری کھول دی، سرفراز نواز نے ویڈیو بیان میں کہا ہے کہ انھوں نے جسٹس قیوم کمیشن کو بتایا تھا کہ 1999 کے ورلڈکپ میں میچز فکسڈ تھے ، سیف الرحمان کی تحقیقات میں  وسیم اکرم نے کرپشن کا اعتراف کرلیا تھا۔

سرفراز نواز کے مطابق وسیم اکرم کے اعترافی بیان کی آڈيو اور ويڈيو حکومت کے پاس موجود ہے ، اگر وسيم اکرم پر اس وقت پابندی لگادی جاتی تو آج حالات مختلف ہوتے۔ سرفراز نواز نے وسیم اکرم کے بھائی ندیم اکرم پر بھی جوئے میں ملوث ہونے کا الزام لگادیا ہے۔

سرفراز نواز نے بتایا کہ وہ ورلڈکپ میں پاکستان اور بنگلہ دیش کے میچ سے پہلے وسیم اکرم سے ملے اور بتایا کہ میچ فکس کئے جانے کی باتیں ہورہی ہیں، اس پر وسیم اکرم نے انکار کیا اور کہا تھا پاکستان میچ جیتے گا۔

انھوں نے چیئرمین کرکٹ بورڈ احسان مانی سے جوا گروپ کو پی سی بی سے نکالنے کی اپیل کی ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو