پاکستانی ڈاکٹر نے ٹرمپ کو سبق پڑھادیا

پاکستانی امریکن ڈاکٹر نے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو سائنس پڑھا دی۔ امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا تھا کہ ڈاکٹروں نے دنیا بھر میں لاک ڈاون کرادیا جبکہ وہ چند روز میں امریکا کو بزنس کیلئے کھول دیں گے۔ امریکا کے نامور پلمونولوجسٹس میں سے ایک ڈاکٹر عمران شریف نے صدر ٹرمپ کو کورونا سے اموات اور مریضوں کی بڑھتی تعداد کے حقائق کیسے بتائے یہ انہی کی زبانی سنتے ہیں۔

ڈاکڑ عمران شریف ایم ڈی ، ایف سی سی پی ہیں اور پلمونری میڈیسن میں اسیپیشلسٹ مانے جاتے ہیں۔ کریٹیکل کیئر میڈیسن اور سلیپ میڈیسن بھی ان کی دلچپسی کے خاص شعبے ہیں۔ زبرنیوز سے بات کرتے ہوئے انہوں نے بتایا کہ امریکا کی مختلف ریاستوں کے اسپتال کورونا سے نمٹنے کیلئے بالکل تیار نہیں تھے۔

ڈاکٹر عمران شریف کا تعلق کیلی فورنیا کے شہر سانتا اینا سے ہے ، وہ نہ صرف ریگلولر پیشنٹس کو دیکھتے ہیں بلکہ انٹینسیو کیئر اور ایمرجنسی شعبے میں بھی مریضوں کا معائنہ کرتے ہیں۔ انھوں نے 1991 میں ڈاؤ میڈیکل کالج سے ڈاکٹری کی تعلیم حاصل کی تھی اور 16 سال سے پریکٹس کر رہے ہیں۔

پچھلے چند ہفتوں کے دوران ڈاکٹر عمران شریف نے کورونا سے متعلق کئی سنگین نوعیت کے کیسز دیکھے ہیں اور زبرنیوز سے خصوصی بات کرتے ہوئے انہوں نے اپنے تجربات سے بھی آگاہ کیا، ڈاکٹر شریف نے بتایا کہ زیادہ تر بیماروں کی عمریں 40 سے 65 برس کےدرمیان ہیں۔

ٹرینڈنگ

مینو