پاکستان میں فلم بنانا چاہتی ہوں ، نرگس آبیار

آسکر کیلئے نامزد پہلی ایرانی خاتون فلمساز نرگس آبیار کی فلم شیار 143 کی کراچی میں نمائش کا اہتمام کیا گیا۔

آرٹس کونسل میں فلم کی نمائش کا اہتمام ایرانی قونصل خانے کے تعاون سے کیا گیا، لوگوں کی بڑی تعداد فلم دیکھنے پہنچی اور فارسی کی یہ فلم اردو زبان میں پیش کی گئی۔

نرگس آبیار نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شیار 143 بنانے کا مقصد ان شہدا کی ماؤں کو خراج تحسین پیش کرنا تھا جو کئی برس اپنے بیٹوں کی منظر رہیں۔ انھوں نے پاکستان میں فلم بنانے کی خواہش کا اظہار کیا اور بتایا کہ انھیں اجازت نامے کا انتظار ہے۔

اس فلم کی نمائش کے بعد ایرانی قونصل جنرل نے نرگس آبیار کی کامیابیوں کا ذکر کرتے ہوئے بتایا کہ ایسی فلمیں دونوں ممالک کے درمیان دیرینہ اور دوستانہ تعلقات کی مضبوطی کا باعث بنیں گی۔

آئیں فلم کی کچھ جھلکیاں دیکھتے ہیں اور یہ بھی جانتے ہیں کہ نرگس آبیار نے زبرنیوز سے خصوصی گفتگو میں انقلاب ایران کے مستقبل سے متعلق کیا کہا ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو