ڈھانچا کچرے سے ملا، ذکیہ کے بیٹے سے تفتیش

کراچی میں خاتون کی لاش دفن کرنے کے بجائے 10 سال تک فریزر میں بند رکھی گئی ہے اور اب پولیس نے کچرے سے ڈھانچہ برآمد کیا ہے۔

گلشن اقبال بلاک 11 سے خاتون ذکیہ کی 10 سے 11 برس پرانی لاش کا ڈھانچہ ملا ہے ، ذکیہ کے بھائی محبوب نے پولیس کو دیئے گئے بیان میں دعوی کیا کہ شگفتہ اور اسکے بھائی نے ماں کی محبت میں لاش فریز کردی تھی ، وہ 2 دن پہلے بہن کے گھر گیا تو دیکھا کہ لاش بستر پر پڑی ہے، ذکیہ کا ذہنی توازن بھی ٹھیک نہیں تھا۔

پولیس کے مطابق ذکیہ کے بیٹے اور بیٹی کا انتقال ہوا تو ان کے بھائی محبوب نے یہ ذمے دار سنبھالی تھی ، ذکیہ کی بیٹی شگفتہ کا 4 ماہ پہلے انتقال ہوا تھا ، پولیس زیرحراست محبوب سے تفتیش کررہی ہے اور اہم انکشافات کا امکان ہے، حکام کے مطابق معاملہ قتل کا بھی ہوسکتا ہے اور ذکیہ کا فلیٹ بچوں کے مرنے کے بعد کافی عرصہ خالی پڑا رہا تھا۔

ٹرینڈنگ

مینو