کابینہ نے سرکولیشن کے ذریعے منظوری دی

اللہ اللہ کرکے آئی جی سندھ کی تعیناتی کا مسئلہ حل ہوگیا، وفاقی حکومت نے مشتاق مہر کو آئی جی سندھ لگانے کا فیصلہ کرلیا۔

ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ نے سرکولیشن کے ذریعے مشتاق مہر کو آئی جی سندھ لگانے کی منظوری دی ہے ، مشتاق مہر کراچی پولیس چیف کی حیثیت سے 3 سال خدمات انجام دے چکے ہیں ، سندھ حکومت نے 5 افسروں کے ناموں پر مشتمل سمری بھجوائی تھی ، ان میں گریڈ 22 کے مشتاق مہر بھی شامل تھے جبکہ دیگر 4 افسران 21 ویں گریڈ کے تھے۔

سندھ کابینہ نے گزشتہ دنوں آئی جی کلیم امام کو ہٹا کر ان کی خدمات وفاق کے سپرد کرنے کی منظوری دی تھی جبکہ وفاقی حکومت نے تبدیلی کابینہ کی منظوری سے مشروط کردی تھی۔

وزیراعظم عمران خان اور وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کی ملاقات میں بھی آئی جی سندھ کو ہٹانے پر اتفاق ہوا تھا لیکن پھر وفاقی حکومت نے یہ معاملہ وزیراعلی اور گورنر پر چھوڑ دیا تھا۔

ٹرینڈنگ

مینو