کورونا: اسلام آباد کی مسجد سیل

کورونا کیسز سامنے آنے کے بعد اسلام کی مسجد اور مدرسہ سیل کردیا گیا۔

ذرائع کے مطابق مسجد و مدرسہ باب السلام کے خطیب کے والد قائم علی شاہ کا 3 روز پہلے کورونا کے باعث انتقال ہوا تھا ، اب ٹیسٹ کرائے گئے تو خطیب اور ان کے 7 قریبی رشتے دار بھی کورونا سے متاثر پائے گئے ، اسلام آباد کی انتظامیہ نے مسجد و مدرسہ سیل کردیا ہے۔

ذرائع کے مطابق مسجد میں باقاعدہ نماز پڑھنے اور متاثرہ افراد سے ملاقات کرنے والوں کو تلاش کرکے ٹیسٹ کئے جارہے ہیں.

وبا پھیلنے کے خدشات ہی کی وجہ سے صدر عارف علوی اور علما کرام کی ملاقات میں 20 نکات پر اتفاق کیا گیا تھا، ان شرائط کے مطابق مساجد میں قالین یا دریاں نہیں بچھائی جائیں گی اور فرش پر نماز پڑھی جائے گی۔ گھر سے جائے نماز لانے کو ترجیح دی جائے، نماز کے بعد گفتگو سے گریز کیا جائے گا، مساجد میں صحن ہو تو نماز وہاں ادا کی جائے گی، 50 سال سے زائد عمر کے لوگ ، نابالغ اور مریض مساجد میں نہیں جائیں گے۔ تراویح صرف مسجد کے احاطے میں پڑھی جائے گی، مسجد کے فرش پراسپرے کیا جائے گا اور نمازیوں کے درمیان 6 فٹ کا فاصلہ رکھنا ضروری ہوگا۔

ٹرینڈنگ

مینو