بزرگ افراد کو گھروں تک محدود کرنے کا امکان

برطانیہ میں ہفتے کو 20 سے زائد اموات کے بعد صورتحال گھمبیر ہوتی جارہی ہے، طبی ماہرین نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ کیسز رپورٹ مریضوں سے کئی گنا زیادہ ہوسکتے ہیں ، اس صورت حال میں ملکہ برطانیہ نے بھی لندن میں اپنا بکھنگم پیلس چھوڑ دیا ہے۔

برطانیہ میں تقریبا ساڑھے 11 سو مریض رپورٹ ہوئے ہیں لیکن برطانوی ماہرین کے مطابق ملک میں 2 کروڑ افراد کے کورونا سے بیمار پڑنے کا خدشہ ہے۔ وبا سے نمٹنے کیلئے 70 برس سے زائد عمر کے افراد کو 20 روز بعد گھروں میں رہنے کی ہدایت دیئے جانے کا امکان ہے ، برطانوی میڈیا کے مطابق بیمار نہ ہونے کی صورت میں بھی عمر رسیدہ افراد کو 4 ماہ تک گھروں میں رہنے کی ہدایت دی جائے گی۔

سرکاری ہیلتھ نظام  پر دباو کم کرنے کیلئے نجی اسپتالوں کی خدمات لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے جبکہ سپر مارکیٹوں اور اسپتالوں کی حفاظت فوج کو دینے کا منصوبہ بنالیا گیا ہے۔

کورونا وائرس کے باعث ملکہ الزبتھ نے بکھنگم پیلس چھوڑ دیا ، وہ اب ونڈسر کاسل منتقل ہوگئی ہیں۔کورونا بے قابو ہوا تو ملکہ برطانیہ اور ان کے شوہر شہزادہ فلپ سنڈرینگھم چلے جائیں گے۔ برطانوی میڈیا کے مطابق ملکہ کی سینڈرنگھم قیام گاہ کے قریب اسپتال میں بھی کرونا مریضوں کی تصدیق کردی گئی ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو