کورونا: 444 ہیلتھ ورکرز بیمار، کہاں کتنے متاثر

کورونا وبا نے ابتک ڈاکٹروں اور نرسوں سمیت 444 ہیلتھ ورکز کو متاثر کیا ہے جبکہ 8 کا انتقال ہوچکا ہے۔ ایک ہفتے کے دوران طبی عملے کے متاثر ہونے کی شرح 75 فیصد بڑھ گئی ہے۔

حکومتی اعداد و شمار کے مطابق وبا سے ایک ہفتے میں مزید 191 ہیلتھ ورکرز متاثر ہوگئے، ابتک 216 ڈاکٹر ، 67 نرسز اور عملے کے دیگر 161 ارکان بیمار ہوچکے ہیں۔

آزاد جموں کشمیر میں ڈاکٹر سمیت 4 ہیلتھ ورکرز کا کورونا ٹیسٹ مثبت آیا اور چاروں صحت یاب ہوگئے۔ بلوچستان میں 51 ڈاکٹر ، 4 نرسز اور عملے کے 35 ارکان سمیت 90 ہیلتھ ورکرز بیمار ہوئے ، ان میں سے 79 گھروں پر قرنطینہ میں ہیں، 10 صحت یاب ہوچکے ہیں اور ایک کا انتقال ہوا ہے۔

وائرس نے گلگت بلتستان میں ڈاکٹر ، نرس اور عملے کے دیگر 16 ارکان سمیت 18 ہیلتھ ورکرز کو متاثر کیا، ان میں سے 13 اسپتالوں میں ہیں ، 3 صحت یاب ہوئے اور 2 کا انتقال ہوا ہے۔

اسلام آباد میں مریضوں کا علاج کرتے ہوئے 18 ڈاکٹر ، 10 نرسز اور دیگر 13 ارکان سمیت 41 ہیلتھ ورکز بیمار پڑے، ان میں سے 34 گھروں پر اور 2 اسپتال میں ہیں ، 4 صحت یاب ہوچکے ہیں اور ایک کا انتقال ہوا ہے۔

وبا نے خیبرپختونخوا میں 51 ڈاکٹروں ، 14 نرسز اور دیگر 38 ارکان سمیت 103 ہیلتھ ورکرز کو بیمار کیا، ان میں سے 77 گھروں پر اور 5 اسپتالوں میں ہیں، 20 صحت یاب ہوئے ہیں اور ایک کا انتقال ہوا ہے۔

پنجاب میں 58 ڈاکٹر ، 21 نرسز اور دیگر 23 ملازمین سمیت طبی عملے کے 102 ارکان کا کورونا ٹیسٹ مثبت آیا، 14 گھروں پر قرنطینہ اور 50 اسپتالوں میں ہیں، ان میں 38 صحت یاب ہوچکے ہیں۔

سندھ میں کورونا نے 36 ڈاکٹروں ، 17 نرسز اور دیگر 33 ملازمین سمیت 86 ہیلتھ ورکز کو بیمار کیا، ان میں سے 68 اسپتالوں میں ہیں ، 15 صحت یاب ہوچکے ہیں اور 3 کا انتقال ہوا ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو