کورونا: 53ہزار اموات، 10لاکھ سے زائد بیمار

کورونا وائرس سے دنیا بھر میں ہلاکتیں 53 ہزار اور کیسز 10 لاکھ 10 ہزار سے بھی زائد ہوگئے۔ امریکا میں مزید 781 ، اٹلی 760 ، اسپین 961 ، جرمنی 176 ، فرانس 1355 ، ایران 124، برطانیہ 569 ، ترکی 79 ، بیلجئم 183 ، نیدرلینڈز 166 ، کینیڈا 60 اور سعودی عرب میں مزید 5 اموات ہوئی ہیں۔

امریکا میں لگ بھگ 6 ہزار اموات ہوچکی ہیں۔ نیوجرسی نے ہلاکتوں میں نیویارک کو بھی پیچھے چھوڑ دیا ، مشی گن اور کیلی فورنیا میں بھی اموات بڑھ رہی ہیں، اس وقت امریکا کی کوئی ریاست ایسی نہیں جہاں کیسز رپورٹ نہ ہوئے ہوں۔

امریکی اخبار کے مطابق نیویارک میں اسپتالوں کی انتظامیہ سے کہا گیا ہے کہ وہ صرف ان مریضوں کو داخل کریں جن کے بچنے کی امید ہو ، امراض قلب کے ان مریضوں کو نہ دیکھا جائے جن کا زندہ رہنا محال ہو ، شہر میں ایمبولینس سروس غیر فعال ہے اور 20 فیصد ملازمین بیمار ہیں۔

برطانیہ میں تقریبا 3 ہزار اموات ہوئی ہیں اور 34 ہزار کیسز ہیں ، ان میں سے 163 مریضوں کی حالت انتہائی تشویشناک ہے، اب برطانوی عوام کی اکثریت سمجھتی ہے کہ وزیراعظم بورس جانسن نے لاک ڈاؤن کا حکم تاخیر سے دیا اور 81 فیصد افراد چاہتے ہیں کہ تمام کمرشل پروازون پر پابندی لگادی جائے۔

اسپین میں اموات 10 ہزار 3 سو سے زائد ہیں اور اٹلی میں 14 ہزار کے قریب پہنچ چکی ہیں۔

ایک ہی دن میں ساڑھے 13 سو سے زائد اموات نے فرانسیسی عوام کو خوفزدہ کردیا ، طبی عملہ لاشیں اٹھا اٹھا کر تھک گیا، یہاں 59 ہزار مریضوں میں سے ساڑھے 6 ہزار کی حالت انتہائی تشویش ناک ہے۔

کینیڈا میں 22 مارچ کے بعد ہلاکتوں کی شرح تیزی سے بڑھی ہے اور اب گزشتہ 24 گھنٹوں میں سب سے زیادہ اموات ریکارڈ کی گئی ہیں۔

سعودی عرب نے کورونا کا پھیلاو روکنے کیلئے مکہ اور مدینہ میں کرفیو نافذ کیا ہے، صبح 6 سے سہ پہر 3 بجے تک شہریوں کو اشیا کی خریداری کیلئے گھروں سے نکلنے کی اجازت دی گئی ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو