دونوں ملکوں میں کشیدگی مزید بڑھ گئی

ترکی نے ادلب میں شام کے 2 جنگی جہاز تباہ کردیئے ہیں جس کے بعد دونوں ملکوں کے درمیان کشیدگی مزید بڑھ گئی  ہے۔

ترک وزارت دفاع نے ٹویٹر پر بتایا کہ فورسز نے ڈرون گرائے جانے کے بعد ایس یو 24 ایئرکرافٹس کو نشانہ بنایا ، شامی خبرایجنسی کے مطابق دونوں طیاروں پر ادلب میں حملہ کیا گیا البتہ پائلٹس پیراشوٹ کے ذریعے نکلنے میں کامیاب ہوگئے۔

کشیدگی بڑھنے کے بعد شام نے ادلب میں ایئراسپیس بند کردی تھی اور کہا گیا ہے کہ اگر کوئی بھی طیارہ فضائی حدود میں داخل ہوا تو اسے دشمن کا طیارہ سمجھ کر گرادیا جائے گا۔

واضح رہے کہ ایران کی حمایت یافتہ شامی حکومت روس کی مدد سے ادلب میں ان باغیوں کے خلاف کارروائی کر رہی ہے جنھیں ترکی کی حمایت حاصل ہے۔ ادلب شام کا وہ آخری صوبہ ہے جس کے اہم علاقے اب بھی باغیوں کے کنٹرول میں ہیں ، شام اور ترکی کی لڑائی شدت اختیار کرتی جارہی ہے اور جنگ زدہ علاقے سے ابتک ہزاروں افراد ہجرت کرچکے ہیں۔

ٹرینڈنگ

مینو