سندھ : لاک ڈاؤن،ایئرپورٹس کی بندش کا فیصلہ

وزیراعلی سندھ مراد علی شاہ نے صوبے میں رات 12 بجے سے 15 دن کے لاک ڈاؤن کا اعلان کردیا ہے۔ اب انتہائی ضرورت پڑنے پر گھر سے نکلنے کیلئے شناختی کارڈ دکھانا ہوگا جبکہ کراچی اور سکھر ایئرپورٹ بھی بند کئے جائیں گے۔

وزیراعلی سندھ نے واضح کیا کہ اب ایک گاڑی میں صرف 2 افراد سفر کرسکیں گے، اسپتال جانا ہو تو 3 افراد کو اجازت ہوگی۔ تمام غیر ضروری دفاتر بند رہیں گے اور اجتماعات پر پابندی ہوگی۔

مراد علی شاہ نے بتایا کہ کھانے پینے کے سامان کی خریداری ممکن ہوگی جبکہ حکومت مہنگائی اور ذخیرہ اندوزی روکنے کی کوشش کرے گی۔ انھوں نے عوام سے باہر نہ نکلنے اور کورونا کی علامات ظاہر ہونے پر خود کو قرنطینہ کرنے کی اپیل کی۔

حکومتی ہدایت کے بعد اب مساجد اور عبادت گاہیں بند کردی جائیں گی۔

سندھ حکومت نے کورونا ایمرجنسی فنڈ بھی قائم کیا اور اسے چلانے کیلئے 5 رکنی کمیٹی بنائی ہے، وزیراعلیٰ نے مخیر حضرات سے عطیات دینے کی اپیل کی۔

لاک ڈاون کے تحت فضائی رابطوں پر بھی پابندی لگائی جائے گی، کراچی اور سکھر ایئرپورٹ پر لوکل پروازیں نہیں آسکیں گی اور دونوں ایئرپورٹس 24 مارچ دن ایک بجے سے بند کردیئے جائیں گے۔

اٹلی ، امریکا اور فرانس سمیت ترقی یافتہ ممالک میں کورونا سے اموات دیکھنے والے شہریوں نے سندھ حکومت کے بروقت اور درست اقدام کا خیر مقدم کیا ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو