2019 میں ایک درجن ونڈ پاور منصوبے شروع کئے، امریکی سفیر

پاکستان میں امریکا کے سفیر پال ڈبلیو جونز نے کہا ہے کہ امریکا پاکستانی برآمدات کی سب سے بڑی منڈی ہے اور اس میں مزید وسعت کا امکان ہے۔

امریکی سفارتخانے کی ویب سائٹ کے مطابق امریکی سفیر نے مضمون میں کہا کہ اسٹیٹ بینک آف پاکستان کے مطابق امریکا نے 2019 میں 4 ارب ڈالر سے زیادہ کی پاکستانی مصنوعات خریدیں جو دوسرے نمبر پر پاکستانی برآمدات خریدنے والے ملک سے دوگنا زیادہ ہیں۔ امریکا پاکستان کی 3500 سے زائد مصنوعات کو ڈیوٹی فری رسائی دیتا ہے ، امریکا گزشتہ 20 برس میں 19 سال تک پاکستان میں سب سے زیادہ سرمایہ کاری کرنے والے 5 سرفہرست ممالک میں سے ایک رہا ہے۔ ایک ڈیڑھ سال کے دوران امریکی کمپنیوں نے پاکستان میں ڈیڑھ ارب ڈالر سے زائد کی براہ راست سرمایہ کاری کا عزم کیا ہے۔

پال ڈبلیو جونز نے بتایا کہ امریکن بزنس کونسل آف پاکستان کی رکن 60 سے زیادہ کمپنیاں 10 لاکھ پاکستانیوں کو تنخواہیں اور روزگار فراہم کرنے کے ساتھ پاکستان کو ہر سال ایک ارب ڈالر سے زیادہ رقم محاصل کی مد میں ادا کرتی ہیں، امریکی کمپنیاں پاکستانی شہریوں کو ملازمت اور تربیت بھی دیتی ہیں۔

انھوں نے کہا کہ امریکا پاکستان کے صاف اور جدید توانائی مستقبل میں سرمایہ کاری کر رہا ہے ، امریکا 50 برس سے پاکستان میں پن بجلی پیداوار کے سب سے بڑے آبی ذخائر تعمیر کرنے میں مددگار رہا ہے اور پاکستان پر مالی بوجھ ڈالے بغیر پن بجلی منصوبوں میں تعاون جاری رکھے ہوئے ہے۔ امریکا اور پاکستان تربیلا اور منگلا ڈیموں کی بحالی پر کام کر رہے ہیں ، گومل زام اور کُرم تنگی ڈیم کے مقامات پر پانی کی ترسیل ، بجلی کی پیداوار اور کسانوں کیلئے آبپاشی میں نمایاں اضافے کے منصوبوں میں مدد بھی کی جارہی ہے۔

امریکی سفیر نے بتایا کہ شعبہ توانائی میں اشتراک نے امریکی عوام کی مدد سے قرض کے بجائے گرانٹس کی فراہمی کے ذریعے ، بجلی نظام کی استعداد میں 3500 میگاواٹ سے زیادہ اضافہ کرتے ہوئے 4 کروڑ 20 لاکھ سے زیادہ پاکستانیوں کو بجلی پہنچائی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکا نے 2019 میں ایک درجن نئے ونڈ پاور منصوبوں کے آغاز سے پاکستان کی ہواؤں اور شمسی توانائی صلاحیت کو بروئے کار لانے پر کام شروع کردیا ہے ، یہ منصوبے پاکستان کے ونڈ انرجی شعبہ میں 750 ملین ڈالر سے زیادہ نئی سرمایہ کاری لائیں گے اور 2021 تک 610 میگاواٹ بجلی کی فراہمی شروع کردیں گے۔ امریکی سرمایہ کاری پاکستان میں قدرتی گیس کی ترسیل میں اضافے کیلئے بین الاقوامی معیار کی ٹیکنالوجی بھی لارہی ہے۔

امریکی سفیر کا کہنا تھا کہ یو ایس ایڈ کے تعلیمی پروگرام نے مستحق ہونہار طالب علموں کو پاکستان میں ڈگری مکمل کرنے کیلئے 18 ہزار اسکالر شپس دی ہیں ، امریکی حکومت کے فل برائیٹ جیسے اسکالر شپ پروگرام کے ذریعے ہر سال 800  سے زیادہ پاکستانیوں کو حصول تعلیم کیلئے امریکا بھیجا جاتا ہے۔

امریکی سفیر نے بتایا کہ تجارت میں آسانی کے بہتر اقدامات سے مزید امریکی کمپنیاں سرمایہ کاری کریں گی ، ہم تجارت کیلئے آسانی پیدا کرنے والے ممالک کی درجہ بندی میں بہتری اور اس کو جاری رکھنے کے عزم پر حکومت ِپاکستان کو مبارکباد پیش کرتے ہیں۔

ٹرینڈنگ

مینو