سکھر میں 13 کیسز رپورٹ، پنجاب میں پہلا مریض

پنجاب میں کورونا کا پہلا کیس رپورٹ ہوا ہے، سکھر میں 13 ، کراچی میں 4 اور اسلام آباد میں ایک کیس سامنے آیا ہے، ملک بھر میں رپورٹ کیسز کی تعداد 52ہوگئی ہے۔

ایران سے تفتان بارڈر کے ذریعے سکھر لائے گئے 13 زائرین کے کورونا سے متاثر ہونے کی تصدیق ہوگئی ہے، زائرین کیلئے سکھر کی لیبر کالونی میں قرنطینہ بنایا گیا ہے ، یاد رہے کہ یہ وہ افراد ہیں جنھیں تفتان کے قرنطینہ میں بھی رکھا گیا تھا اور حکومت نے دعوی کیا تھا کہ ان میں کوئی شخص وائرس سے متاثر نہیں، اسی کے بعد انھیں سندھ جانے کی اجازت دی گئی تھی۔

کراچی میں 4 مریضوں کی تصدیق ہوئی ہے،  3 مریض سعودی عرب سے کراچی آئے تھے جبکہ ایک مریض کی کوئی ٹریول ہسٹری نہیں ہے۔

پنجاب میں کورونا کا پہلا کیس رپورٹ ہوگیا، لاہور کے میواسپتال انتظامیہ نے 54 سالہ شخص کے متاثر ہونے کی تصدیق کردی ہے، مریض 10 مارچ کو برطانیہ سے آیا تھا اور اس کے قریبی رشتے داروں کے ٹیسٹ بھی کئے گئے ہیں۔

اسلام آباد میں پاکستان انسٹی ٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (پمز) کے ترجمان نے بتایا کہ نیا مریض پہلے سے زیرعلاج خاتون کا شوہر ہے، ہفتہ کو خاتون کے کورونا سے متاثر ہونے کی تصدیق ہوئی تھی۔ میاں بیوی آئی سولیشن وارڈ میں زیرعلاج ہیں۔

پمز میں اس وقت کورونا کے 4 مریض ہیں،یہ چاروں آئیسولیشن وارڈ میں ہیں جبکہ روزانہ درجنوں افراد کے ٹیسٹ بھی کئے جارہے ہیں۔

ٹرینڈنگ

مینو