کراچی میں بارش، حادثات میں 7 اموات

اعجاز امتیاز، محسن رضا

سندھ ، بلوچستان اور پنجاب کے مختلف شہروں میں بارش کے بعد ندی نالوں میں طغیانی آگئی، کراچی کے اکثر علاقوں میں بجلی غائب ہوگئی اور مختلف علاقوں میں حادثات کے باعث 7 افراد کی جان چلی گئی۔

کراچی میں دوسرے روز بھی کہیں تیز اور ہلکی بارش کا سلسلہ جاری رہا، اہم شاہراہیں ایک بار پھر ندی نالوں کا منظر پیش کرنے لگیں اور نالوں کا پانی قریبی علاقوں میں داخل ہوگیا۔

وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ اور پیپلزپارٹی کی رہنما شہلا رضا نے شہر کے مختلف علاقوں کا دورہ کیا اور پانی کی نکاسی کے کام کا جائزہ لیا۔ محکمہ موسمیات کے مطابق بارش کا سلسلہ مزید 24 گھنٹے جاری رہے گا۔

کراچی میں 24 گھنٹے کے دوران حادثات میں 7 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں، مختلف علاقوں میں کرنٹ لگنے سے 6 افراد جاں بحق ہوئے ، کرنٹ لگنے سے بلوچ کالونی میں 24 برس کی فرزانہ حنیف ، لانڈھی میں 18 برس کے قیصر نواز،  لیاری چاکیواڑہ میں 30 برس کے شہری ، سٹی کورٹ کے قریب 8 برس کے بچے ،  صدر برنس سینٹر کے قریب 20 برس کے نوجوان اور ماڈل کالونی میں 27 برس کے بلال کی جان گئی۔  سرجانی ٹاون میں 12 برس کا بچہ تالاب میں ڈوب کر جاں بحق ہوا۔

شہر قائد میں بارش ہوتے ہی کے الیکٹرک کے 4 سو فیڈر ٹرپ کرگئے اور بیشتر علاقوں کو بجلی کی فراہمی معطل ہوگئی ، اورنگی ٹاؤن، لانڈھی، سرجانی،  گلستان جوہر ، ملیر ، شاہ فیصل کالونی ، محمود آباد، ڈیفنس، بلدیہ ٹاؤن، اولڈ سٹی ایریا، فیڈرل بی ایریا اور لیاقت آباد میں کئی کئی گھنٹے بتی غائب رہی۔

سکھر میں بارش سے نشیبی علاقے ڈوب گئے، بادل لاڑکانہ، سانگھڑ، میرپورخاص، خیرپور، بدین اور ٹنڈو الہ یار میں بھی برسے۔

بلوچستان کے علاقوں ژوب، خضدار اور حب میں بارشوں کے باعث ندی نالوں میں طغیانی آگئی جبکہ پنجاب کے شہروں رحیم یار خان اور چکوال میں تیز بارش ہوئی۔

ٹرینڈنگ

مینو