بلاول کلبھوشن سے متعلق مبینہ خفیہ آرڈیننس لے آئے

محمد شاہد

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو سے متعلق مبینہ خفیہ آرڈینس سامنے لے آئے۔ انھوں نے سوال کیا ہے کہ حکومت جواب دے غیرآئینی اور غیر قانونی آرڈیننس کے ذریعے ریلیف کیوں دینا پڑرہا ہے؟

بلاول بھٹو نے کلبھوش یادیو سے متعلق مبینہ آرڈیننس کی کاپی ٹوئٹر پر شیئر کی اور کہا کہ سلیکٹڈ حکومت کا خفیہ آرڈیننس ناقابل برداشت ہے۔ انھوں نے حکومت کے احتساب اور وزیراعظم کے استعفے کا مطالبہ کیا۔

سکھر میں پریس کانفرنس کے دوران بلاول نے کہا کہ پی ٹی آئی کلبھوشن کو سہولت دینے کیلئے آرڈینسس لائی۔ اس کے باوجود بھارتی جاسوس نے فائدہ لینے سے انکار کردیا۔

انھوں نے کہا کہ آرڈیننس کی ضرورت تھی تو اپوزیشن اور عوام کو اعتماد میں لیا جانا چاہئے تھا، اگر ایسا آرڈینسس پیپلزپارٹی لاتی تو دفاع پاکستان کونسل اسلام آباد میں دھرنا دے دیتی۔

انھوں نے عمران خان کو ملک کی قیادت کیلئے نااہل قرار دیا اور کہا کہ کلبھوشن کیلئے آرڈیننس لارہے ہیں کیا یہ آپ کی خارجہ پالیسی کی کامیابی ہے ؟ سانحہ اے پی ایس کے ذمہ دار احسان اللہ احسان کو اسی دور حکومت میں فرار کرایا گیا ، عمران خان کو زبردستی حکومت دلوا کر زبردستی چلوائی جارہی ہے، اتحادیوں کو بھی زبردستی باندھ کر رکھا گیا مگر یہ سلسلہ زیادہ دیر نہیں چلے گا۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ جے آئی ٹی جے آئی ٹی کا کھیل بند کیا جائے ، کراچی کو ہر ہفتے بند کرانے والے گینگسٹرز اور دہشت گرد لیاری نہیں نائن زیرو کے تھے۔ کیا لیاری کا گینگسٹر اسامہ بن لادن سے بھی بڑا تھا ، اسامہ کی جے آئی ٹی ہم نے آج تک نہیں دیکھی۔

ٹرینڈنگ

مینو