کورونا: ڈیکسامیتھاسون موثر دوا قرار

برطانیہ کی نیشنل ہیلتھ سروس نے ڈیکسامیتھاسون کو کورونا مریضوں کے علاج کیلئے استعمال کرنے کی منظوری دے دی ہے۔

برطانوی سائنسدانوں نے اسٹیرائیڈ دوا ڈیکسامیتھاسون کو موثر قرار دیا ہے ، تحقیق سے واضح ہوا ہے کہ یہ دوا وینٹی لیٹر پر موجود مریضوں کو دی جائے تو موت کا خدشہ 35 فیصد کم ہوجاتا ہے۔ ایسے مریض جنھیں کسی بھی اسٹیج پر آکسیجن درکار ہو ان کی موت کے خدشات 20فیصد رہ جاتے ہیں۔

یہ اسٹیرائیڈ ٹیبلٹ کی صورت میں بھی دستیاب ہے اور انجکشن میں بھی دیا جاسکتا ہے جبکہ اس کی قیمت صرف 5 پاؤنڈ ہے۔

آکسفورڈ یونیورسٹی کے پروفیسر پیٹر ہاربی نے اسٹیرائیڈ پر تحقیق کی تھی اور ان کا کہنا ہے کہ اس سے ہر آٹھویں مریض کی جان بچائی جاسکتی ہے.

برطانیہ کے وزیراعظم بورس جانسن نے کورونا وائرس کے خلاف اس دوا کو اب تک کی سب سے بڑی پیش رفت قرار دیا ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو