کراچی: اسمارٹ لاک ڈاؤن متوقع، پشاور میں پابندی

کراچی کے 3 اضلاع میں لاک ڈاؤن کی تجویز دے دی گئی ، حیدرآباد میں کورونا سے متاثرہ علاقوں کی نشاندہی کرلی گئی جبکہ پشاور کے کئی علاقوں میں اسمارٹ لاک ڈاؤن جاری ہے، خیبرپختونخوا حکومت نے فیس ماسک نہ پہننے پر جرمانہ عائد کرنے کا اعلان کردیا ہے۔

کراچی کے ضلع کورنگی ، ملیر اور غربی کے ڈی ایچ اوز نے متعلقہ ڈپٹی کمشنرز کو اسمارٹ لاک ڈاؤن کی تجویز دی ہے، ہیلتھ افسر ضلع کورنگی کے خط میں بتایا گیا کہ کورنگی ڈھائی نمبر ، ڈیرھ نمبر ، 4 نمبر اور مہران ٹاؤن میں کورونا متاثرین کی تعداد بڑھ رہی ہے، اب تک 2400 سے زیادہ افراد کا کورونا ٹیسٹ مثبت آچکا ہے، کورنگی میں سعادت کالونی ، شمسی سوسائٹی ، مردان چوک اور شاہ فیصل 2 نمبر میں بھی لاک ڈاؤن کی سفارش کی گئی ہے۔

ملیر کھوکھرا پار ، کالا بورڈ ، یوسی 9 اور یوسی 11 لانڈھی ، سائٹ ، بلدیہ ٹاون ، گلشن معمار ، خدا کی بستی اور سرجانی سیکٹر الیون ون میں کیسز بڑھنے کی نشاندہی اور اسمارٹ لاک ڈاؤن کی سفارش کی گئی ہے۔

کیماڑی ٹاون اور اورنگی ٹاؤن کے مختلف علاقوں میں بھی فوری اسمارٹ لاک ڈاؤن کی تجویز سامنے آئی ہے، سندھ کے دوسرے بڑے شہر حیدر آباد میں انتظامیہ نے ان علاقوں کی نشاندہی کرلی ہے جہاں متاثرین کی تعداد زیادہ ہے۔

پشاور کے جن علاقون میں اسمارٹ لاک ڈاؤن جاری ہے ان میں اشرفیہ کالونی ، چنار روڈ یونیورسٹی ٹاون ، دانش آباد ، سیکٹر ای ٹو ، فیز ون ، حیات آباد شامل ہیں۔

اسمارٹ ڈاون کے دوران ان علاقوں میں کسی شخص کو آنے یا جانے کی اجازت نہیں دی جارہی، کھانے پینے کے سامان کی دکانیں، جنرل اسٹور ، تندور ، میڈیسن اسٹور اور ایمرجنسی سروس کی دکانیں کھولنے کی اجازت دی گئی ہے۔

صوبائی حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ جن مارکیٹوں میں اس او پیز پر عمل نہیں کیا جارہا ان کے خلاف کارروائی کی جائے گی، حکومت نے فیس ماسک نہ پہننے پر جرمانوں کا بھی اعلان کردیا ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو