فلائیڈ کی تدفین، وائٹ ہاوس کی صفائی پرزور

امریکا میں مقتول جورج فلائیڈ کی آخری رسومات میں نامور شخصیات اور ماضی میں قتل کئے گئے سیاہ فام افراد کے اہلخانہ نے بھی شرکت کی۔

جورج فلائیڈ کی آخری رسومات ٹیکساس کے شہر ہیوسٹن میں ہوئیں، تقریب میں 500 افراد کو مدعو کیا گیا تھا ، ان میں میئرہیوسٹن سلویسٹر ٹرنر ، رکن کانگریس شیلا جیکسن ، امریکی اداکار جیمی فوکس ، جینگ تھیٹم اور باکسنگ پروموٹر فلائیڈ مے ویدر سمیت کئی نامور شخصیات شامل تھیں۔

فلائیڈ کی بھتیجی نے شرکا سے جذباتی خطاب کرتے ہوئے کہا کہ یہ نفرت کی بنا پر قتل تھا۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ولیم بل لاسن نے کہا کہ اب حقیقی تبدیلی آئے گی اور وائٹ ہاوس کو صاف کرنا ہوگا۔

ڈیموکریٹک صدارتی امیدوار جو بائیڈن نے ویڈیو میسج دیا، انھوں نے کہا کہ نسلی انصاف کا وقت آگیا ہے۔

جورج فلائیڈ کے بہیمانہ قتل پر دنیا بھر میں احتجاج کیا جارہا ہے اور نسلی عدم انصاف ختم کرنے کا مطالبہ زور پکڑ گیا ہے۔

46 برس کے سیاہ فام جورج فلائیڈ 25 مئی کو مینیاپلیس میں سفید فام پولیس اہلکار کی سفاکی سے ہلاک ہوئے تھے۔ اہلکار نے اپنا گھٹنا 8 منٹ 46 سیکنڈ تک ان کی گردن پر رکھ کر دبایا تھا جس سے ان کی موت واقع ہوگئی تھی۔

ہیوسٹن میں اب ایسا ایگزیکٹو آرڈر تیار کیا جارہا ہے جس کے تحت گلا دبانے پر پابندی عائد کردی جائے گی۔

ٹرینڈنگ

مینو