جڑانوالہ: لڑکی سے اجتماعی زیادتی

جڑانوالہ روڈ پر تھانہ مانگٹانوالہ کے قریب کار سوار 6 افراد نے لفٹ دینے کے بہانے لڑکی کو کار میں بٹھا کر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناڈالا۔

پولیس ذرائع نے زبرنیوز کو بتایا کہ ننکانہ صاحب کے تھانہ تھانہ مانگٹانوالہ کی حدود میں زیادتی کا واقعہ 24 ستمبر کا ہے اور لڑکی بس خراب ہونے پر گاڑی کے انتظار میں سڑک پر کھڑی تھی، اس دوران کار سوار ملزمان نے اسے لفٹ دینے کے بہانے گاڑی میں بٹھایا اور ڈیرے پر لے گئے، ملزمان نے لڑکی کو نشہ آور چیز پلا کر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا اور برہنہ کھیتون میں پھینک کر فرار ہوگئے۔

متاثرہ لڑکی شیخوپورہ کی رہائشی ہے۔ پولیس نے 5 دن بعد 2 نامزد اور 4 نامعلوم افراد کے خلاف مقدمہ درج کیا جبکہ اب تک کسی کو گرفتار نہیں کیا جاسکا ، وزیراعلی سردار عثمان بزدار نے واقعے کا نوٹس لے کر آئی جی پنجاب انعام غنی سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔

لاہور گجرپورہ موٹروے پر گزشتہ ماہ خاتون سے زیادتی کی گئی تھی، پولیس اس کیس میں ایک ملزم کو گرفتار کرسکی جبکہ مرکزی ملزم عابد اب تک مفرور ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو