جلد اچھا وقت آنے والا ہے، آصف زرداری

ویب ڈیسک

پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین اور سابق صدر آصف زرداری نے پنجاب میں جیالوں کو متحد رہنے کی نصیحت کرتے ہوئے جلد اچھا وقت آنے کی پیشگوئی کردی۔

پیپلزپارٹی پنجاب کے صدر قمر الزماں کائرہ اور جنرل سیکریٹری چوہدری منظور احمد سے ٹیلی فون پر گفتگو کرتے ہوئے آصف زرداری نے کہا کہ اٹھارہویں ترمیم نے وفاق کو جوڑا ، این ایف سی ایوارڈ نے اسے مزید مضبوط کیا، حکمران آئین کو مانتے ہیں نہ کسی اصول کو، یہ ہر چیز توڑپھوڑ دینا چاہتے ہیں۔

سابق صدر نے کہا کہ بدقسمتی سے وفاقی حکومت صوبوں کو مضبوط بنانے کے بجائے کمزور کررہی ہے۔ وفاق میں بیٹھے لوگوں کو سیاسی ادراک نہیں اور وہ ہر بحران کو مزید گہرا کر دیتے ہیں۔

آصف زرداری نے کہا کہ انھوں نے کوئی ذاتی جرم نہیں کیا ، انھوں نے بلوچستان سے معافی مانگی، وہ بلوچوں کو قومی دھارے میں لانا اپنی ذمے داری سمجھتے تھے، 2008 میں بلوچستان کی تمام قوم پرست جماعتوں نے الیکشن کا بائیکاٹ کیا لیکن پیپلزپارٹی کی کوششوں سے تمام جماعتیں 2013 کے الیکشن میں قومی دھارے میں واپس آئیں۔

آصف زرداری نے بتایا کہ آج اختر مینگل سے بات کی جارہی ہے کیونکہ وہ پارلیمنٹ میں ہیں، پیپلز پارٹی بلوچستان کے مسائل حل کرنے کیلئے کردار ادا کرنے کو تیار ہے، شرط یہ ہے کہ بلوچ نوجوان مسلح جدوجہد چھوڑ کر سیاسی دھارے میں واپس آئیں۔ ریاست کو بھی بلوچستان میں اب زیادہ محتاط ہونے کی ضرورت ہے۔ اگر اکبر بگٹی جیسا کوئی دوسرا واقعہ ہوا تو حالات سنبھالنا کسی کے بس میں نہیں رہے گا۔

آصف زرداری کاکہنا تھا کہ مقدمات کا خوف نہیں، پہلے بھی عدالتوں کا سامنا کیا اور اب بھی کریں گے۔

ٹرینڈنگ

مینو