کرتارپور راہداری کھولنے کی پیشکش مسترد

پاکستان نے کرتارپور راہداری کھولنے کا اعلان کرکے دنیا بھر میں سکھ برادری کو خوش کیا لیکن بھارت نے ساری خوشی غارت کردی، کورونا وبا کا بہانا تراش کر پاکستان کی پیشکش مسترد کردی گئی۔

پاکستان نے 29 جون سے کرتارپور راہداری کھولنے کی پیشکش کی تھی اور بھارت کو فیصلے سے آگاہ کردیا گیا تھا، وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے ٹوئٹر بیان میں کہا تھا کہ دنیا بھر میں عبادت گاہیں کھولی جارہی ہیں ، پاکستان بھی مہاراجہ رنجیت سنگھ کی برسی پر کرتارپور راہداری کھولنا چاہتا ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق مودی سرکار نے پاکستان کی پیشکش مسترد کردی ہے، بھارت نے کورونا وبا کے باعث سرحد پار جانے پر پہلے ہی پابندی لگارکھی ہے۔

دنیا بھر میں سکھ برادری نے پاکستانی حکومت کے فیصلے کی حمایت کی ہے۔ بھارت میں آباد سکھوں نے پاکستان آنے کی خواہش کا اظہار کرتے ہوئے مودی سرکار سے کہا ہے کہ وہ کورونا وبا کو جواز بنا کر یاتریوں کو روکنے کے بجائے ایس او پیز کے تحت سفر کی اجازت دے۔

ٹرینڈنگ

مینو