پارٹی اختلافات، مشیرفیصلے کر رہے ہیں،فواد

ویب ڈیسک

وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے پی ٹی آئی کے اندرونی اختلافات سے پردہ اٹھا دیا اور یہ بھی بتا دیا کہ حکومت نے 6 ماہ میں کارکردگی نہ دکھائی تو معاملات دوسری طرف چلے جائیں گے۔

وائس آف امریکا سے گفتگو میں فواد چوہدری نے بتایا کہ اقتدار سے پہلے نظام میں تبدیلی کے بارے میں عمران خان کے خیالات واضح تھے، انھوں نے انکشاف کیا کہ حکومت بنتے ہی  جہانگیر ترین، شاہ محمود قریشی اور اسد عمر کے اتنے جھگڑے ہوئے کہ سارا سیاسی طبقہ کھیل سے باہر ہوگیا۔

انھوں نے بتایا کہ جہانگیر ترین نے اسد عمر کو وزارت خزانہ سے ہٹوایا، اسد عمر دوبارہ آئے تو انھوں نے جہانگیر ترین کی چھٹی کرادی، شاہ محمود قریشی اور جہانگیر ترین کی ملاقاتیں ہوئیں لیکن بات نہیں بنی اور پارٹی کی اندرونی لڑائیوں سے حکومت کو نقصان پہنچا۔

فواد چوہدری نے بتایا کہ اس وقت وزیراعظم کے مشیر فیصلے کررہے ہیں اور سیاسی لوگ منہ دیکھ رہے ہیں، کپتان کی بنیاد ٹیم ہل گئی، نئے لوگوں میں صلاحیت بھی نہیں ہے۔

وفاقی وزیر نے بتایا کہ ہماری اپنی کوتاہیاں ہیں کہ ڈیلیور نہیں کرسکے، وزیراعظم عمران خان نے کابینہ سے کہہ دیا ہے کہ آپ کے پاس کام کیلئے 6 ماہ ہیں ، اس کے بعد وقت آپ کے ہاتھ سے  نکل جائے گا اور معاملات دوسری طرف چلے جائیں گے۔

فواد چوہدری نے عمران خان سے بھی شکوہ کیا اور کہا کہ وزیراعظم نے قیادت اپنے بچوں کو منتقل نہیں کرنی تھی انھیں بہترین لوگوں کو عہدے دینے چاہئے تھے، پتہ نہیں کس نے مشورہ دیا کہ کمزور افراد کو آگے لائیں جو بات بات پر ڈکٹیشن لیں۔

ٹرینڈنگ

مینو