ایران: چابہار ریل منصوے سے بھارت کی چھٹی

ویب ڈیسک

ایران نے بڑا قدم اٹھالیا ، چابہار ریل منصوبے سے بھارت کی چھٹی کردی۔

ایرانی حکومت نے فنڈز اور منصوبے میں تاخیر کا نوٹس لیتے ہوئے بھارت کو منصوبے سے نکال دیا، تہران انتظامیہ نے اب یہ منصوبہ خود مکمل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

ایران کے وزیر ٹرانسپورٹ ریلوے ٹریک بچھانے کے منصوبے کا گزشتہ دنوں افتتاح کرچکے ہیں اور یہ منصوبہ مارچ 2022 میں مکمل ہوگا۔

بھارت اور ایران نے 2016 میں افغان سرحد کے ساتھ چابہار بندرگاہ سے زاہدان تک ریل لائن کے معاہدے پر دستخط کئے تھے۔ تجریہ کاروں کا کہنا ہے کہ ایران کا یہ اقدام امریکی اتحادی بھارت سے دوری کا اشارہ ہے ، اس کی اہمیت اس لئے بھی ہے کیونکہ چین ایران کے ساتھ 25 سالہ 400 بلین ڈالرز مالیت کے اسٹریٹجک شراکت داری معاہدے کو حتمی شکل دے چکا ہے۔

چین اس معاہدے کے تحت ایران میں مواصلات ، بینکنگ ، صنعت ، ریلوے لائنز اور بندرگاہوں کی تعمیر میں مدد دے گا جبکہ تہران بیجنگ کو 25 سال تک سستا تیل فراہم کرے گا۔

ٹرینڈنگ

مینو