ایران نے امریکی صدر کو دانہ ڈال دیا

ایران نے کورونا وبا میں پھنسے امریکا کے صدر کو  نازک وقت پر دانہ ڈال دیا۔ ڈونلڈ ٹرمپ نے دانہ چن لیا تو ان کی مقبولیت بڑھ سکتی ہے مگر ایران بھی اہم ہدف حاصل کرلے گا۔

ایرانی حکومت کے ترجمان علی رباعی نے بتایا کہ امریکا کو تمام قیدیوں کے تبادلے کی غیر مشروط پیش کش کردی گئی ہے اور یہ بھی واضح کیا گیا ہے کہ اس معاملے میں کسی ثالث کو شامل کرنے کی بھی ضرورت نہیں۔

حکومتی ترجمان نے بتایا کہ امریکا نے ابھی پیش کش کا جواب نہیں دیا ہے۔ امریکا میں ایرانی قیدیوں کی جان کو کورونا وبا کے سبب شدید خدشات ہیں ، امید ہے کہ ٹرمپ انتظامیہ سیاست پر قیدیوں کی زندگیوں پر ترجیح دے گی۔

ایرانی میڈیا کے مطابق امریکا کی جیلوں میں 60 برس کے پروفیسر سائرس اصغری سمیت کئی قیدی موجود ہیں۔ پروفیسر سائرس کورونا کا شکار ہوچکے ہیں اور بری کئے جانے کے باوجود انہیں وطن آنے نہیں دیا جارہا۔ دوسری طرف امریکا کا دعویٰ ہے کہ نیوی کے سابق اہلکار مائیکل وائٹ سمیت دیگر امریکی قیدی ایران کے پاس ہیں۔

دونوں ملک 2019 میں بھی قیدیوں کا تبادلہ کرچکے ہیں۔ یہ پیشرفت سوئس حکومت کی معاونت سے ممکن ہوئی تھی۔

ٹرینڈنگ

مینو