سنتھیارچی کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم

محمد عثمان

اسلام آباد کی عدالت نے ایف آئی اے کی درخواست مسترد کرتے ہوئے سابق وزیراعظم بینظیر بھٹو پر الزام تراشی کرنے والی امریکی بلاگر سنتھیارچی کے خلاف مقدمہ درج کرنے کا حکم دے دیا۔

اسلام آباد کے ایڈیشنل سیش جج جہانگیر اعوان نے سنتھیارچی کے خلاف مقدمہ درج کرانے کی درخواست پر 13 جون کو محفوظ کیا گیا فیصلہ سنادیا، عدالت نے ایف آئی اے کو مقدمہ درج کرنے کا حکم دے دیا۔

پیپلزپارٹی اسلام آباد کے صدر شکیل عباسی نے بینظیر بھٹو پر الزمات لگانے پر سنتھیارچی کے خلاف ایف آئی اے میں مقدمہ درج کرنے کی اپیل کی تھی۔ ایف آئی اے اور پولیس نے سنتھیا رچی کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست خارج کرنے کی استدعا کی تھی۔

امریکی بلاگر کے خلاف مقدمہ درج کرانے کیلئے ایک اور درخواست اسلام آباد کی سیشن کورٹ میں شہری ندیم مغل نے بھی دائر کی تھی، عدالت نے اس پر  ایف آئی اے سے جواب طلب کرلیا ،  ایڈیشنل سیشن جج نے ریمارکس دیئے کہ دوسرے کیس میں ایف آئی اے کے کمنٹس آجائیں پھر دیکھ لیتے ہیں۔

امریکی خاتون نے سابق وزیرداخلہ رحمان ملک پر جنسی زیادتی کرنے جبکہ سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی اور مخدوم شہاب الدین پر دست درازی کا الزام لگایا تھا، جسے تینوں شخصیات مسترد کرچکی ہیں۔

رحمان ملک سنتھیارچی کو 50 ارب روپے ہرجانے کا نوٹس بھیج چکے ہیں جبکہ سنتھیا نے یوسف رضا گیلانی کو 12 کروڑ روپے ہرجانے کا نوٹس بھجوایا ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو