بولٹن کی کتاب: ٹرمپ اشاعت رکوانے میں ناکام

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اپنے سابق قومی سلامتی مشیر جان بولٹن کی کتاب کی اشاعت رکوانے میں ناکام ہوگئے.

امریکی عدالت نے کتاب چھپنے سے روکنے کیلئے دائر کی گئی محکمہ انصاف کی درخواست مسترد کردی ہے۔ جج نے ریمارکس دیئے کہ قومی سلامتی کے سابق مشیر نے اپنی کتاب کے مندرجات میں قومی سلامتی سے متعلق جوا کھیلا اور قانونی چارہ جوئی ممکن ہے۔

جج نے کہا کہ کتاب کی لاکھوں کاپیاں مارکیٹ میں پہنچ چکی ہیں، اب اشاعت روکنے کا وقت گزر چکا اور جو نقصان ہونا تھا ہوچکا ہے۔

صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے ردعمل میں کہا کہ یہ جان بولٹن کے خلاف عدالت کی فتح ہے ، جان بولٹن کو ویسے ہی بھاری قیمت چکانی ہوگی جیسے ان سے پہلے افراد کو چکانا پڑتھی تھی، بولٹن دوسروں پر بم گرا کر مارتے تھے اب ان پر بم گریں گے۔

جان بولٹن کی کتاب دی روم ویئر اٹ ہیپنڈ یعنی وہ کمرہ جہاں یہ سب کچھ ہوا میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ ڈونلڈ ٹرمپ نے دوبارہ انتخابات میں فتح کیلئے چین سے مدد مانگی تھی ، صدر کو یہ بھی معلوم نہیں تھا کہ برطانیہ ایٹمی طاقت ہے۔

جان بولٹن کے مطابق ڈونلڈ ٹرمپ نے فن لینڈ کے صدر سے پوچھا تھا کہ کیا فن لینڈ روس کے زیراثر ہے ، کتاب میں لکھا ہے کہ وزیرخارجہ مائیک پومپیو نے ایک بار کہا کہ صدر ٹرمپ کے دماغ میں گوبر بھرا ہے۔

ٹرینڈنگ

مینو