کراچی میں بارش اور ٹوئٹر پر سیاست

کراچی میں صرف برسات ہی جم کر نہیں ہوئی بارش پر سیاست بھی جم کر کی گئی۔ کھلاڑی دن بھر جیالوں کو سڑکوں پر دوڑاتے رہے۔

بارش کی پہلی بوند پڑتے ہی پی ٹی آئی والے سوشل میڈیا پر ایکٹو ہوگئے ، شہر میں اتنا پانی دکھایا کہ جیالے تو جیالے اپنے بھی حیران رہ گئے۔ پیپلزپارٹی کا میڈیا ونگ کمزور نظر آیا لیکن جواب بھرپور دیا گیا۔

وفاقی وزیر علی زیدی نے سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیو اٹھائی اور اپنے نام سے شیئر کردی لیکن جگہ کا نام نہیں بتایا ، صوبائی وزرا سعید غنی اور ناصر حسین شاہ کی جوڑی بھی تحریک انصاف والوں کے دعوے جھوٹے ثابت کرنے کیلئے نکل پڑی، اگرچہ انھوں نے ڈالمیا کا نام بتا کر ویڈیو شیئر کی لیکن انھیں کوئی ایسا علاقہ نہ ملا جہاں پانی جمع ہو۔

علی زیدی نے گھر بیٹھے بیٹھے ٹوئٹر سے ایک اور ویڈیو اٹھائی اور شیئر کردی جس میں نیپا چورنگی پر دریا کا منظر نظر آیا، دوسری طرح سعید غنی اور ناصر حسین شاہ کار دوڑاتے ہوئے مین کورنگی روڈ پہنچ گئے اور شاہراہ دیکھ کر ایسا لگا جیسے یہاں بارش ہوئی ہی نہیں۔

ایسا لگا جیسے وفاقی وزیر کو جے آئی ٹی والے پارسل کی طرح کوئی ویڈیوز دیتا رہا جبکہ سعید غنی کو تلاش کے باوجود پورے کراچی میں کوئی سڑک گیلی نظر نہ آئی۔

وفاقی وزیر نے دوچار ٹوئٹ کرکے بلے والوں کو لائن پر لگادیا جبکہ سعید غنی اور ناصر حسین شاہ کو آدھا شہر گھما دیا۔ شہری سیاسی رہنماوں کی پھرتیوں پر حیران ہیں اور سوچتے ہیں کہ عوامی مسائل حل کرنے کیلئے یہ پھرتیاں کب دکھائی جائیں گی۔

ٹرینڈنگ

مینو