مودی کو جواب ایک منٹ کی خاموشی، بلاول

محمد عثمان

چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ حکومت نے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے پر ایک منٹ کی خاموشی اور کشمیر ہائی وے کا نام سری نگر ہائی وے رکھ کر مودی کو جواب دیا۔

پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے بلاول بھٹو نے کہا کہ کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کی قرارداد منظور ہوئی لیکن وزیراعظم پارلیمنٹ میں موجود نہیں ، کشمیر سے متعلق حکومتی کردار پر کشمیری اور پاکستانی عوام مطمئن نہیں ہیں۔

بلاول بھٹو نے کہا کہ حکومت کہتی ہے بھارت سے بات نہیں ہوسکتی، ایسا ہے تو آپ نے کشمیر ڈے پر بھارت کو تجارتی رسائی کیوں دی ؟ کشمیر کا فیصلہ دلی یا اسلام آباد نے نہیں کشمیریوں نے کرنا ہے۔ ماضی میں ایک آمر نے پاکستانی شہریوں کو پیسوں کیلئے بیچا، ہمیں عوامی حقوق کا تحفظ کرنا ہے۔

قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر اور نون لیگ کے صدر شہباز شریف نے ایوان میں منظور کئے گئے بلوں پر مشاورت نہ کرنے کے باعث جے یو آئی سے معذرت کرلی۔

شہبازشریف کا کہنا تھا کہ بلوں کے معاملے پر تبادلہ خیال میں کمی ہوئی، آئندہ ایسا نہیں ہوگا۔ سینیٹ اور قومی اسمبلی نے گزشتہ دنوں اپوزیشن کی ترامیم شامل کرنے کے بعد اقوام متحدہ سیکیورٹی کونسل اور انسداد دہشت گردی ترمیمی بلز کی منظوری  دی تھی ، جمعیت علمائے اسلام نے ان بلز کی مخالفت کی تھی۔

ٹرینڈنگ

مینو